ڈالر کی آسمان سے باتیں ۔۔!! روپے کی بے قدری۔۔۔۔سٹاک مارکیٹ سے انتہائی بری خبر آ گئی

کراچی (ویب ڈیسک )کورونا وائرس نے قیمتی جانوں کے بعد معیشت کو بھی نگلنا شروع کر دیاہے جس کے اثرا ت پاکستان میں بھی واضح طور پر دکھا ئی دے رہے ہیں ،آج سٹا ک مارکیٹ میں بھی کاروبار کا آغاز ہوا تو شدید مندی چھاگئی اور کاروبار روکنا پڑ گیا جبکہ دوسری جانب ڈالر بھی ایک مرتبہ پھر سے مہنگاہو گیاہے ۔ تفصیلات کے مطابق انٹر بینک میں ڈالر کی قدر میں 38 پیسے اضافہ ہو گیاہے جس کے بعد ڈالر 158 روپے 90 پیسے پر ٹریڈ ہو رہاہے ۔دوسری جانب سٹاک ایکسچینج میں کاروبار کا آغاز ہوا تو 100 انڈیکس 30 ہزار 416پوائنٹس پر تھا تاہم مارکیٹ پر کھلتے ہی مندی چھا گئی اور 100 انڈیکس 5.7 فیصد کمی کے ساتھ 1750 پوائنٹس گر گیا ، تیزی کے سے گرتے ہوئے انڈیکس کو مد نظر رکھتے ہوئے کاروبار کو 45 منٹ کیلئے روک دیا گیا ۔کاروبار کا دوبارہ آغازہوا تو انڈیکس میں کچھ بحالی ہوئی اور اس وقت 100 انڈیکس 1367 پوائنٹس کی کمی کے ساتھ 29 ہزار 48 پوائنٹس پر آ گیاہے ۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے حکومتوں کو کہا ہے کہ اگر کورونا وائرس کی وجہ سے تجارتی مارکیٹوں کو خراب صورتحال کا سامنا ہے تو زرمبادلہ کی مداخلت ضروری ہوسکتی ہے. آئی ایم ایف نے پالیسی سے متعلق متعدد اقدامات تجویز کیے جو پوری دنیا کی حکومتیں اپنی معیشتوں کو کورونا وائرس کے منفی اثرات سے بچانے کے لیے اقدامات کر سکتی ہیں. واضح رہے کہ کورونا وائرس سے 2 لاکھ سے زائد افراد متاثر جبکہ 8 ہزار زائد اموات ہوچکی ہیں اور وبا کے نتیجے میں معاشی بحران کی کیفیت نے جنم لے لیا ہے‘آئی ایم ایف نے مشورہ دیا کہ بیرونی جھٹکوں کے نتیجے میں ایکسچینج ریٹ متاثر ہوسکتی ہے، اگر مارکیٹ کے حالات خراب ہو جائیں تو زرمبادلہ کی مداخلت ضروری ہوسکتی ہے.آئی ایم ایف نے مشورہ دیا کہ بحران یا بحران کے قریب ترین صورتحال کے پیش نظر عارضی مدت کے لیے بڑے پیمانے پر سرمایہ کے بہاﺅ کے اقدامات سنبھالنے کی ضرورت ہوگی.عالمی مالیاتی ادارے نے مرکزی بینکوں پر زور دیا کہ وہ مارکیٹ کی مدد کے لیے قرضہ دے آئی ایم ایف نے کہا کہ مالیاتی مدد طلب کی ضرورت کو پورا اور اعتماد کی بحال کا باعث بنے گی اور گھروں اور فرموں کے لیے قرض لینے والے اخراجات کو کم کرے گا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں