امریکہ میں صورتحال بد تر ہوگئی، وائٹ ہاؤس کی لائٹیں بند کیو کر دی گئیں؟

واشنگٹن (ہاٹ لائن نیوز ) سیاہ فام کی ہلاکت کے خلاف امریکہ میں احتجاج ، وائٹ ہاؤس کی لائٹیں بند کرنا پڑ گئیں جو کہ عموماََ امریکی صدر کی موت پربند کی جاتیں ہیں۔ تفصیلات کے مطابق پولیس افسر نے سیاہ فام شہری جارج فلوئیڈ کی گردن پر 8 منٹ 46 سیکنڈ تک گھٹنے ٹیکے رکھے اور تقریباً 3 منٹ بعد ہی فلوئيڈ بے حرکت ہو گئے تھے۔ پولیس اہلکار کے ہاتھوں سیاہ فام شخص کی ہلاک کے بعد سے امریکہ بھر میں خاص طور پر وائٹ ہاؤس کے باہر مظاہرے کئے گئے۔مظاہرین کی جانب سے سرکاری املاک کی توڑ پھوڑ سمیت سڑکوں پر موجود گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچایا گیا ۔ تاہم اس میں سب اہم بات یہ ہے کہ مظاہروں وائٹ ہاؤس کے قریب پہنچ گئے تھے جس کے بعد لائٹس کو بھی بند کر نا پڑ گیا جو کہ کوئی معمولی بات نہیں ، وائٹ ہاؤس کی لائٹس صرف تب بند کی جاتی ہیں جب صدر انتقال کر جاتا ہے۔احتجاج کے دوران مظاہرین کی پولیس کے ساتھ جھڑپیں بھی دیکھنے میں آئیں۔جبکہ پولیس بھی بعض مقامات پر بے بس نظر آئی۔ تاہم کئی افراد کو گرفتار بھی کر لیا گیا ۔گزشتہ روز سیاٹل سے نیویارک تک ہزاروں افراد نے مارچ کیا مظاہروں میں شدت کے بعد امریکی دارالحکومت میں رات کے اوقات میں کرفیو لگا دیا گیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق واشنگٹن ڈی سی میں رات 11 بجے سے صبح 6 بجے تک کر فیو رہے گا۔ ہفتے کی رات پولیس پر حملے، ہنگاموں اور جلاؤ گھیراؤ کے بعد واشنگٹن سمیت 15 امریکی ریاستوں میں نیشنل گارڈز کا گشت جاری ہے۔پرتشدد مظاہروں کے دوران پولیس نے کریک ڈاؤن بھی جاری رکھا جس کے تحت نیویارک میں 350 اور ہیوسٹن میں 130 مظاہرین کو گرفتار کیا گیا۔ یہ بات بھی قابل غور رہے کہ امریکہ میں جاری پرزور مظاہروں کے باعث صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو وائٹ ہاؤس کے بنکر میں جانا پڑ گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں