وزیر اعظم کی جانب سے اچانک صوبائی وزیر کو وزارت سے کیوں ہٹایا گیا؟ وجہ سامنے آگئی

پشاور (ہاٹ لائن نیوز) سینئر اینکر پرسن غریدہ فاروقی کا کہنا ہے کہ اجمل وزیر نے استعفیٰ دیا نہیں، اُن سے استعفی لیا گیا ہے۔ اجمل وزیر کو ڈی نوٹیفائی کیا گیا ہے۔ مبینہ طور پر سرکاری اشتہاری مہم میں کمیشن مانگا گیا، آڈیو بھی موجود ہے، وزیراعلی نے بلوا کر آڈیو سنوائی۔ ا اس معاملے کی خبراسلام آباد تک پہنچ چکی تھی۔ تفصیلات کے مطابق اجمل وزیر کا اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کے معاملہ کا ڈراپ سین، اجمل وزیر مستعفی ہوئے نہیں ان سے استعفیٰ لیا گیا۔ اسی حوالے سے پاکستان کی سینئر اینکر پرسن غریدہ فاروقی نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں کہا کہ ’’مشیرِ اطلاعات خیبرپختونخوا اجمل وزیر کا سکینڈل! استعفی دیا نہیں، اُن سے استعفی لیا گیا ہے۔ اجمل وزیر کو ڈی نوٹیفائی کیا گیا ہے۔ مبینہ طور پر سرکاری اشتہاری مہم میں کمیشن مانگا گیا۔ آڈیو بھی موجود۔ وزیراعلی نے بلوا کر آڈیو سنوائی۔ اسلام آباد میں اعلی سطح تک معاملے کی خبر پہنچی‘‘۔

ایک اور پیغام میں غریدہ فاروقی کا کہنا تھا کہ ’’جیسا کہ میں نے پہلے بتایا، اجمل وزیر کا آڈیو سکینڈل، استعفی دیا نہیں لیا گیا؛ کرونا وائرس سرکاری اشتہاری مہم میں 12فیصد کمیشن ایڈورٹائزنگ ایجنسی سے طلب کرنیکا معاملہ؛ وزیراعلی خیبرپختونخوا نے انکوائری کمیٹی بھی بنا دی‘‘۔


اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں