’’خاتون کے بارے میں الفاظ سےآپکی سوچ کا اندازہ ہوتا ہے، آپکے اس روئیے پر آپکو گرفتار بھی کیا جاسکتا ہے۔۔‘‘ (ن) لیگی رہنما محسن رانجھا سی سی پی او لاہور پر سیخ پا، ویڈیو لیک

لاہور (ہاٹ لائن نیوز) سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انسانی حقوق کے سامنے جب سی سی پی لاہور او عمر شیخ پیش ہوئے تو ایک موقع پر ن لیگ کے محسن رانجھا اور سی سی پی او لاہور کے درمیان خاصی گرما گرمی دیکھنے کو آئی۔۔ عمر شیخ نے کہا کہ آپ مجھ سے بات نہ کریں، مجھ سے کمیٹی کے ذریعے بات کریں جس پر محسن نواز رانجھا برہم ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق عمر شیخ نے محسن نواز رانجھا کے سوال کرنے پر اعتراض کیا تھا، عمر شیخ کا کہنا تھا کہ رانا تنویر نے تحریک استحقاق پیش کررکھی تھی ، محسن رانجھا نے سوال کیا کہ مریم نواز پیشی کے موقع پر آپ نے 780 اے کیوں لگائی ؟ جس پر عمر شیخ نے کہا کہ آپ مجھ سے سوال نہ کریں، آپ کمیٹی کے ذریعے بات کریں۔ یہ سنتے ہی محسن نواز رانجھا برہم ہوگئے اور اپنی سیٹ سے اٹھ اٹھ کر اور چلا چلاکر سی سی پی او لاہور کو کھری کھری سناتے رہے۔محسن رانجھا نے کہا کہ آپکو پتہ نہیں کہ آپکے اس روئیے پر آپکو گرفتار بھی کیا جاسکتا ہے۔ سی سی پی او لاہور نے کہا کہ آپ مالک ہیں بھئی جس پر محسن رانجھا جذباتی ہوگئے اور کہا کہ مالک آپکا رویہ ہے۔ سی سی پی او لاہور بار بار محسن رانجھا سے کہتے رہے کہ مجھے سن لیں لیکن محسن رانجھا غصے میں بولتے رہے جس پر کمیٹی ارکان نے ہاتھ پکڑ کر محسن رانجھا کو کرسی پر بٹھایا۔ سی سی پی او لاہور نے محسن رانجھا کو غصے میں دیکھ ہاتھ جوڑ لئے اور پنجابی لہجے میں کہا کہ “مینوں معاف کر دیو”، جس پر کمیٹٰ کے ایک رکن نے کہا کہ آپ معافیوں کی بوری بھر کر لائے ہیں کمیٹی کے دیگر ارکان معاملہ رفع دفع کرنے کی کوشش کرتے رہے۔ اس سے کس قدر بدتمیزی سے مسلم لیگ نون کا محسن رانجھا پیش آیا سب دیکھ سکتے ہیں۔ان کا اصل مقصد ہی اسے اسکریو کرنا تھا جو ان کے لہجے اور باڈی لینگویج سے واضح نظر آ رہا ہے۔ یہ سویلین بالادستی چاہتے ہیں۔ عمر شیخ کی معذرت کے باوجود محسن رانجھا پھر بھی قابومیں نہ آئے۔ محسن رانجھا نے سی سی پی او لاہور سے کہا کہ خاتون کےبارے الفاظ سےآپ کی سوچ کااندازہ ہوتاہے۔ آپ کوسمجھ جاناچاہیے کہ یہ جنوبی پنجاب نہیں وسطی پنجاب ہے۔ واضح رہے کہ سی سی پی او عمر شیخ ڈی پی او سرگودھا بھی رہ چکے ہیں جہاں سے محسن رانجھا رکن قومی اسمبلی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں