’’ سب کو اسکے بازو کی پڑی ہے مگر جو اس بیچارے کا دل ٹوٹ گیا ہے، اسکا۔۔۔ ‘‘حسن نثار نے بڑی بات کہہ دی

لاہور( ہاٹ لائن نیوز) سینئر صحافی و تجزیہ کار حسن نثار کا کہنا ہے کہ میڈیا بہت ظالم ہے، سبب کو طلال چوہدری کا ٹوٹا ہوا دل تو نظر آرہا ہے لیکن جو اس دل ٹوٹا ہے وہ کسی کو نظر نہیں آرہا۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میرے مطاب میں اینکر پرسن شجیہ نیازی نے سوال پوچھا کہ” مسلم لیگ ن کے رہنماء تنظیم سازی کے لیے لیگی خاتون رہنماء عائشہ رجب بلوچ کے گھر گئے اور وہاں سے باذو بھی تڑوا آئے، سوشل میڈیا پر اس حوالے سے کافی ہنگامہ کھڑا کیا جارہا ہے آپ اس بارے میں کیا کہیں گے؟” سوال کا جواب دیتے ہوئے حسن نثار کا کہنا تھا کہ ” شجیہ میں تو آپ کو بڑا معصوم سمجھتا تھا لیکن آپ بہت ظالم نکلیں ، آپ کی طرح ہی پاکستانی میڈیا بھی ظالم ہے سب کو طلال چوہدری کا ٹوٹا ہوا بازو تو دکھائی دے رہا ہے لیکن جو اس بیچافے کا دِل ٹوٹ گیا اس کا کیا؟ وہ اک کیوٹ سا نوجوان ہے ، دل ٹوٹ چکا ہے اسکا ، رات کے تین بجے تنظیم سازی کرنے والا ن لیگ کی لیڈر شپ اک لاڈلہ ، بازو کو چھوڑ دیں وہ تو جڑ ہی جائے گا، میرا بھی ٹوٹا تھا بچپن میں ، لیکن تنظیم سازی کرتے ہوئے نہیں کسی اور وجہ سے ٹوٹا تھا، اسکے دِل کا سوچیں کیسے جڑے گا”۔دوسری جانب مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کے جھگڑے کے حوالے سے علاقہ مکینوں کا موقف بھی سامنے آگیا ۔ تفصیلات کے مطابق علاقہ مکینوں کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کا گزشتہ ایک سال سے اس گھر میں آنا جا تھا ، وہ پہلے ہمیشیہ رات کو بارہ بجے سے پہلے آتے تھے ، تاہم واقعے کے روز رات دو بج کر چالیس منٹ پر آئے ، جبکہ ان کی گیٹ پر موجود سیکیورٹی گارڈ سے بھی تلخ کلامی ہوئی کیونکہ گارڈ نے کہا

تھا کہ پہلے اہلخانہ سے اس کی بات کروائی جائے پھر وہ انہیں جانے دیں گے لیکن طلال چوہدری نے گارڈ کی بات نہ مانی اور زبردستی اندر آگئے ، تاہم جیسے ہی وہ گھر میں گئے تو ان کا جھگڑا ہوا جس کے نتیجے میں وہ فوری باہر آئے اور اپنے پرائیویٹ گارڈ کو پکارا ۔دوسری طرف مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری پر تشدد اور ن لیگی خاتون رکن قومی اسمبلی کے معاملے کی تحقیقات کیلئے پولیس کی 4 رکنی کمیٹی تشکیل دے دی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق ڈی اسی پی پیپلزکالونی عبدالخالق کمیٹی کی سربراہی کریں گے ، پولیس کی طرف سے تشکیل دی گئی کمیٹی واقعے کی تحقیقات کی روشنی میں قانونی کارروائی تجویز کرے گی ، پولیس ٹیم مسلم لیگ ن کی خاتون رکن اسمبلی عائشہ رجب علی کا بیان قلمبند کرے گی۔واضح رہے کہ پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری جھگڑے میں زخمی ہو گئے تھے ، جس کے بعد انہیں لاہور کے نجی اسپتال میں داخل کروایا گیا ۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری اور ن لیگ کی رکن قومی اسمبلی عائشہ رجب علی کے مابین جھگڑا ہوا تھا جس کے بعد ان کے بھائیوں نے طلال چوہدری پر حملہ کیا ، جھگڑے کے نتیجے میں طلال چوہدری کا بازو دو جگہ سے فریکچر ہوا جب کہ ان کے بائیں بازو کی سرجری لاہور کے نجی اسپتال میں کی گئی ۔ اسپتال ذرائع کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ طلال چوہدری کے سر اور کمر پر شدید چوٹیں آئی ہیں ، جھگڑے میں طلال چوہدری کی مختلف ہڈیاں بھی فریکچر ہوئی ہیں ، طلال چوہدری کو نجی اسپتال کے ایگزیکٹو روم میں رکھا گیا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں