بریکنگ نیوز: جن پر تھی اُمید انہوں نے بھی ساتھ چھوڑ دیا، معروف ترین میڈیا گروپ PDMکے ساتھ ہاتھ کر گیا

گوجرانوالہ (ہاٹ لائن نیوز) جن پر امید تھی انہوں نے بھی ساتھ چھوڑ دیا، jangاخبار پی ڈی ایم کے ساتھ ہاتھ کر گیا۔ رپورٹ کے مطابق پی ڈی ایم کے گزشتہ روز کے گوجرانوالہ میں ہونے والے جلسہ کی پاکستان کے سب سے معروف اور بڑے میڈیا گروپ کے jangاخبار نے فرنٹ پیج پر سنگل خبر تک نہیں لگائی۔

jangاخبار لاہور کے ایڈیشن میں تحریک انصاف کے فرنٹ پیج پر 3 اشتہار لگے ہیں، کوارٹر کوراٹر پیجز کے، jangاخبار نے مین لیڈ فرنٹ پیج پر قومی اسمبلی کے اجلاس کی دی ہے جبکہ اسکے علاوہ سنگل کالم سات خبریں لگائی ہیں، باقی تین اشتہار ہیں۔ jangاخبار نے گوجرانوالہ جلسہ کی خبر صفحہ تین پر مین لیڈ لگائی ہے، jangاخبار گروپ کی جانب سے کوریج نہ ملنے پر ن لیگی رہنما سیخ پا ہو گئے ہیں۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے ن لیگی رہنما حنا پرویز بٹ نے کہا کہ یہ کیا صحافت ہے؟؟؟ گوجرانوالہ کی تاریخ میں سب سے بڑے پاور شو کی فرنٹ پیج پر کوریج ڈھونڈ کر دکھائیں۔۔ان ناہلوں نے کونسا تیر مارا ہے جو اخبارات میں اتنے بڑے بڑے اشتہارات دے رہے ہیں۔ ایک صارف کا کہنا تھا کہ تقریبا تمام بڑے اخبارات کو سرکاری خزانے سے اشتہارات کی مد میں کروڑوں روپے جاری کروا کر جلسے کی کوریج اور حکومت مخالف خبروں کا گلا گھونٹنے کی لیے عوام کے ٹیکس کا پیسہ بطور رشوت استعمال کیا گیا ھے۔ ایک اور صارف کا کہنا تھا کہ یہ آج کے بڑے اخبارات کا فرنٹ پیج ہے۔ حتی الامکان پی ڈی ایم کے پہلے جلسے کی خبر غیر نمایاں کی گئی ہے۔اس مقصد کے لیے فرنٹ پیج پر عمران خان اور عثمان بزدار کی بڑی بڑی تصاویر والے اشتہارات بھی موجود ہیں۔اور اشتہارات بھی گوجرانوالہ سے متعلق ہیں۔یعنی فرنٹ پیج خریدے گئے۔ ایک اور صارف کا کہنا تھا کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلے جب آمریت کے ذریعے میڈیا کو کنٹرول کرنا ہوتا تھا تو خبریں روک دیتے تھے لیکن پی ٹی آئی حکومت کے دور میں اپوزیشن جلسے کو روکنے کیلئے سرکاری خرچے پر اخبارات کو اشتہارات دے کر خبروں کو رکوایا جارہا ہے۔ آگیا تبدیلی۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز پی ڈی ایم کا گوجرانوالہ مین جلسہ ہوا جس سے نواز شریف، مولانا فضل الرحمان، بلاول، مریم و دیگر نے خطاب کیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں