وفاقی وزیر خسرو بختیار کو کام سے روکنے کی درخواست، فیصلہ محفوظ

اسلام آباد (ہاٹ لائن نیوز) نیب انکوائری مکمل ہونے تک خسرو بختیارکو کام سے روکنے کی درخواست قابل سماعت ہونے یا نہ ہونے پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے ابتدائی دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا۔

‏اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامرفاروق کی سربراہی میں دورکنی ڈویژن بینچ نے کیس کی سماعت کی ۔ درخواست گزار وکیل محمداحسن ایڈووکیٹ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ ‏وفاقی وزیر خسرو بختیار کےخلاف اربوں روپے کی کرپشن کی انکوائری زیر التوا ہے ‏مجھے اس کیس میں بطور پٹیشنر دھمکیاں مل رہی ہیں۔ ‏نیب میں درج کرائی گئی شکایت بھی واپس لینے کے لیے دباؤ ڈالا جا رہا ہے۔

عدالت نے استفسار کیا کہ ‏شوگر انکوائری سے آپ کا کیا تعلق ہے درخواست گزار وکیل نے بتایا کہ ‏وہ شوگر ملز کیس میں فریق تھا اسلام آباد ہائی کورٹ نے ابتدائی دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں