جنگ کسی کے مفاد میں نہیں اس لیے ۔۔۔۔۔ ایرانی وزیر خارجہ سے ملاقات میں قمر جاوید باجوہ نے بڑا اعلان کر دیا

راولپنڈی(ویب ڈیسک) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا ہے کہ جنگ کسی بھی ملک کے مفاد میں نہیں ہے تمام فریقین کو تنازعہ کو خطے سے دور رکھنے کے لئےسر توڑ کوششیں کرنی چاہئیں۔ آئی ایس پی آر کے مطابق چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ایرانی وزیر خارجہ

محمد جواد ظریف نے جمعہ کے روز ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران باہمی دلچسپی کے امور اور خطے کی ابھرتی صورتحال پر غور و فکر کیا گیا ۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ جنگ کسی کے مفاد میں نہیں ہے تمام فریقین کو تنازعہ کو خطے سے دور رکھنے کیلئے کوششیں کرنی چاہئیں۔ ایرانی وزیر خارجہ نے علاقائی امن و استحکام کے لئے پاکستان کے کردار کو سراہا۔یاد رہے کہ پاکستان اور ایران نے وزیر اعظم عمران خان کے حالیہ دورہ ایران کے دوران طے پانے والے فیصلوں پر عملدرآمد پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے دو طرفہ معاملات پر تعاون بدستور جاری رکھنے پر اتفاق کیا ہے جبکہ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ خطے میں کشیدگی کسی کے مفاد میں نہیں، پاکستان تمام تصفیہ طلب امور کو سفارتی سطح پر حل کرنے کا حامی ہے، تمام سٹیک ہولڈرز کو تحمل اور بردباری کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے ، پاکستان خطے میں امن و استحکام کے قیام اور کشیدگی میں کمی کیلئے ، اپنا مصالحانہ کردار ادا کرنے کے لئے کوشاں رہے گا ۔ جمعہ کو پاکستان کے دورے پر موجود ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف وفد کے ہمراہ وزارتِ خارجہ پہنچے ، وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے معزز مہمانوں کا خیر مقدم کیا۔ بعد ازاں وزارت خارجہ میں پاکستان اور ایران کے مابین وفود کی سطح پر مذاکرات ہوئے ،پاکستانی وفد کی قیادت مخدوم شاہ محمود قریشی جب کہ ایرانی وفد کی قیادت جواد ظریف کررہے تھے ، مذاکرات میں دو طرفہ تعلقات،

علاقائی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ فریقین نے وزیر اعظم عمران خان کے حالیہ دورہ ایران کے دوران طے پانے والے فیصلوں پر عملدرآمد پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے دو طرفہ معاملات پر تعاون بدستور جاری رکھنے پر اتفاق کیا۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا کہ خطے میں کشیدگی کسی کے مفاد میں نہیں ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان تمام تصفیہ طلب امور کو سفارتی سطح پر حل کرنے کا حامی ہے- تمام سٹیک ہولڈرز کو تحمل اور بردباری کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے کہاکہ پاکستان خطے میں امن و استحکام کے قیام اور کشیدگی میں کمی کے لئے ، اپنا مصالحانہ کردار ادا کرنے کےلئے کوشاں رہے گا ۔ ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ خطے میں قیام امن کیلئے پاکستان کی کاوشوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں ۔ایرانی وزیر خارجہ نے پرتپاک خیر مقدم پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا شکریہ ادا کیا۔ واضح رہے کہ منصب سنبھالنے کے بعد ایرانی وزیر خارجہ کا یہ تیسرا دورہ پاکستان ہے۔آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف کا کہنا تھا کہ جنگ کسی کے مفاد میں نہیں ہے، تمام فریقین کو خطےکو جنگ سے بچانے کے لیےکوششیں کرنے کی ضرورت ہے۔ ملاقات میں ایرانی وزیر خارجہ نے علاقائی امن و استحکام کے لیے پاکستان کے مثبت کردار کو سراہا۔ واضح رہے کہ ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف اس وقت دو روزہ دورے پر پاکستان میں موجود ہیں اور انہوں نے اس سے قبل وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور وزیراعظم عمران خان سے بھی الگ الگ ملاقاتیں کی ہیں۔ شاہ محمود قریشی نے ایران کے ہم منصب کو یقین دلایا کہ پاکستان خطے میں امن و استحکام کے قیام اور کشیدگی میں کمی کے لیے اپنا مصالحانہ کردار ادا کرنے کی کوشش کرتا رہے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں