پاکستانی خزانہ راتوں رات بھرگیا ۔۔۔ آئی ایم ایف کے اربوں ڈالرزکے بعد اب ورلڈ بینک سے کتنے پیسے ملیں گے ؟

اسلام آباد(ویب ڈیسک) عالمی بینک نے پاکستان کے لیے 51 کروڑ ڈالر کے دو منصوبے منظور کئے ہیں، جاری کردہ اعلامیے کے مطابق دونوں پراجیکٹ ٹیکس آمدن میں اضافے کیلئے ٹیکس اداروں کی کارکردگی بڑھانے سے متعلق ہیں۔پہلے منصوبے کے تحت عالمی بنک ایف بی آر کی استعداد کار بڑھانے پر 40 کروڑ ڈالر خرچ کرے گا،

پراجیکٹ کے ذریعے معیشت میں ٹیکسوں کا حصہ 17 فی صد تک پہنچایا جائے گا،اس وقت پاکستان کی معیشت میں ٹیکسوں کا حصہ صرف 9.5 فی صد ہے۔ منصوبے سےٹیکس دہندگان کی تعداد 12 لاکھ سے بڑھا کر 35 لاکھ تک پہنچائی جائے گی۔اعلامیے کے مطابق دوسرا منصوبہ خیبرپختونخوا کی ٹیکس اتھارٹی کے لئےتیار کیا گیا ہے جس کے ذریعے خیبرپختونخواہ ٹیکس اتھارٹی کی استعداد کاربڑھانے کیلئے11 کروڑ80 لاکھ ڈالر خرچ ہوں گے، دوسری جانب یہ بھی خبر ہے کہ وزیراعظم عمران خان اور کرغزستان صدر کی ملاقات میں دونوں ممالک کے درمیان زمینی،فضائی رابطے بڑھانے کا فیصلہ اور سیاحت کےفروغ کیلئے دونوں ممالک میں ویزا شرائط نرم کرنے پر اتفاق کیا گیا جبکہ وزیراعظم عمران خان کی کرغزستان کےصدرکودورہ پاکستان کی دعوت دی۔تفصیلات کے مطابق بشکیک میں وزیراعظم عمران خان اور کرغزستان کے صدر سورون بے جین بیکوف کی ملاقات ہوئی، یہ ملاقات شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس کی سائیڈلائن پر ہوئی۔وزیراعظم نے میزبان صدر کو شنگھائی تعاون تنظیم کا اجلاس منعقد کرانے پرمبارکباد پیش کی جبکہ کرغزستان کے صدر نے شنگھائی تعاون تنظیم میں پاکستان کے کردار کی تعریف کی۔ملاقات میں دونوں رہنماؤں نے باہمی تعلقات کا جائزہ لیا اور مختلف شعبوں میں دو طرفہ تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا، پاکستان اور کرغزستان کے درمیان زمینی اور فضائی رابطے بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا۔دونوں ممالک کے درمیان مشترکہ بین الوزارتی کمیشن بنانے اور سیاسی مشاورتی عمل کو تیز کرنے اور سیاحت کےفروغ کیلئے دونوں ممالک میں ویزا شرائط نرم کرنے پر اتفاق ہوا، اور اب ورلڈ بینک سے یہ خبر آئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں