ناقص کارکردگی : ان لوگوں کی چھٹی ہونے والی ہے ۔۔۔۔ تحریک انصاف کے گھر کے بھیدی کی خبر نے ملکی سیاست میں ہلچل مچا دی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) تحریک انصاف کے رہنما عمر سرفراز چیمہ نے کہا ہے کہ حکومت میں شامل ٹیکنو کریٹس پاکستان کے شہری ہیں اور ان کی جانب سے ماضی میں کارکردگی دکھائی گئی ہے ، اگر کوئی ٹھیک کارکردگی نہ دکھائے گا تو اس کو تبدیل کیا جائے گا ۔ جیونیوز کے پروگرام

”آپس کی بات“میں گفتگو عمرسرفراز چیمہ نے کہا کہ یہ چیز پہلے سے ہی نظر آرہی تھی کہ تاریخ کی بدترین معاشی مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا ، یہ ہم نے پہلے دن سے ہی کہا تھا کہ مشکل صورتحال سے نکلنے کیلئے کڑے وقت سے گزرنا پڑے گا ، پہلی حکومتیں سارے خسارے چھوڑ کرگئیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ دس سال میں جو ہزاروں ارب کے قرضے چڑھائے گئے ، پچھلی تیس چالیس سال میں جوکچھ کیا گیا ہے اس کی وجہ سے جو ملک کی آمدن ہے اس کا نوے فیصد ماضی کے لئے ہوئے قرضوں کوادا کرنے میں جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا سیاسی قیادت کا ایک ایجنڈا ہوتاہے ، حکومت میں شامل ٹیکنو کریٹس پاکستان کے شہری ہیں اور ان کی جانب سے ماضی میں کارکردگی دکھائی گئی ہے ۔ اگر کوئی ٹھیک کارکردگی نہ دکھائے گا تو اس کو تبدیل کیا جائے گا ۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق سینیٹر پرویزرشید نے کہا کہ نوازشریف کسی صورت ڈیل نہیں کریں گے اور انصاف کا دوہرا معیار ہونے کے باوجود عدالت سے رہا ہوں گے۔حزب اختلاف کی تمام جماعتیں مولانا فضل الرحمان کے مارچ میں اپنا اپنا حصہ ڈالیں گی۔عمران خان نئے انتخابات کے لیے راہ ہموار کریں یا مولانا فضل الرحمان کے ساتھ آنے والے بھونچال کا سامنا کریں۔ پیر کے روز نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے سینیٹر پرویزرشید نے کہا کہ نوازشریف کسی صورت ڈیل نہیں کریں گے اور انصاف کا دوہرا معیار ہونے کے باوجود عدالت سے رہا ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ ایسا لگتا ہے نوازشریف اغوا برائے تاوان والوں کے پاس ہیں۔پرویز رشید نے کہا کہ ڈیل کی بحث کرنے والے خود نہیں جانتے کہ وہ کیا کہہ رہے ہیں اور بات طے ہے کہ ن لیگ کبھی بھی ڈیل کی صورت میں اپنی قیادت کی رہائی نہیں چاہتی۔نوازشریف کو لندن میں پیغام ملے تھے کہ وہ واپس نہ آ ئیں اور سیاست سے کنارہ کشی کر لیں لیکن ن لیگی قائد نے ایسا نہیں کیا۔انہوں نے کہاکہ سینٹ انتخاب میں 14 لوگوں کا اپنا ضمیر بیچنا افسوسناک ہے لیکن اپوزیشن جماعتیں متفق ہیں۔ حزب اختلاف کی تمام جماعتیں اپنا اپنا حصہ ڈالیں گی۔ عمران خان نئے انتخابات کے لیے راہ ہموار کریں یا مولانا فضل الرحمان کے ساتھ آنے والے بھونچال کا سامنا کرے۔ سینیٹر پرویزرشید نے کہا کہ نوازشریف کسی صورت ڈیل نہیں کریں گے اور انصاف کا دوہرا معیار ہونے کے باوجود عدالت سے رہا ہوں گے۔حزب اختلاف کی تمام جماعتیں مولانا فضل الرحمان کے مارچ میں اپنا اپنا حصہ ڈالیں گی۔ عمران خان نئے انتخابات کے لیے راہ ہموار کریں یا مولانا فضل الرحمان کے ساتھ آنے والے بھونچال کا سامنا کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں