مشتاق سکھیرا کی بحالی کا عدالتی حکم ۔۔۔۔ حکومتی رد عمل نے سب کو حیران کر ڈالا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) حکومت نے وفاقی ٹیکس محتسب مشتاق سکھیرا کی بحالی کو چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے ،حکومت نے وزارت قانون و انصاف کو ٹاسک سونپ دیا۔ وزارت قانون و انصاف اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے پر انٹرا کورٹ اپیل دائر کرے گی، واضح رہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے

مشتاق سکھیرا کی بطور وفاقی ٹیکس محتسب برطرفی کو کالعدم قرار دیا تھا۔یاد رہے کہ اسلام آباد ہائیک ورٹ وفاقی ٹیکس محتسب مشتاق سکھیرا کی برطرفی کے خلاف درخواست پر فیصلہ محفوظ کیا تھا ، مشتاق سکھیرا کی برطرفی کے خلاف حکم امتناع فیصلہ سنائے جانے تک برقرار رہے گا۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ میں وفاقی ٹیکس محتسب کی برطرفی کے خلاف درخواست پر سماعت ہوئی، چیف جسٹس اطہر من اللہ پر مشتمل بنچ نے سماعت کی ،عدالت نے استفسار کیا کہ مشتاق سکھیراکے خلاف کوئی کریمنل چارج توفریم نہیں؟ اٹارنی جنرل نے کہا کہ وفاقی حکومت نے کچھ کرنا ہوتا توکافی عرصہ پہلے کرچکی ہوتی،وکیل مشتاق سکھیرا نے کہا کہ صدر پاکستان کے خلاف بھی انسداد دہشت گردی عدالت میں کیس زیرالتوا ہے، مشتاق سکھیرا پرتو کوئی مس کنڈکٹ کا چارج بھی نہیں ہے، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ وفاقی حکومت نے مشتاق سکھیرا کیخلاف کوئی ریفرنس بھی دائرنہیں کیا، ماڈل ٹاؤن کا چارج بھی حکومت نے مشتاق سکھیرا کیخلاف فریم نہیں کیا، اسلام آباد ہائیکورٹ وفاقی ٹیکس محتسب مشتاق سکھیرا کی برطرفی کے خلاف درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا، چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ نے فیصلہ محفوظ کیا،عدالت نے مشتاق سکھیراکی برطرفی کے خلاف حکم امتناع فیصلہ سنائے جانے تک برقرار رکھنے کا حکم دے دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں