پولیس نے ہاتھ کھڑے دیئے۔۔۔۔اہم شخصیت کے قتل کیس میں اپنی ناکامی کا اعتراف کر لیا

کراچی(ویب ڈیسک) سندھ پولیس نے گزشتہ دنوں قتل ہونے والے میجر ثاقب اقبال کے کیس میں ناکامی کا اعتراف کرلیا۔ نجی نیوز چینل جیو نیوز کے مطابق کراچی کی انسداد دہشت گردی عدالت میں پولیس کی جانب سے میجر ثاقب اقبال کے قتل کیس کا عبوری چالان پیش کیا گیا۔پولیس نے عبوری چالان میں بتایا

کہ دوران تفتیش ملزمان نعمان عرف ماڑو اور فاروق عرف بابو کے خلاف میجر ثاقب کے قتل میں ملوث ہونے کے شواہد نہیں ملے اور ملزمان سے ملنے والے اسلحے اور میجر ثاقب کے قتل میں استعمال ہونے والا اسلحے کے خول میچ نہیں ہو سکے۔چالان کے مطابق ملزمان نے دوران تفتیش بتایا کہ انہوں نے ڈر اور خوف کی وجہ سے قتل کا اعتراف کیا تھا جب کہ تفتیش میں ملزمان سے آلہ قتل بھی برآمد نہیں ہوا ہے اور ملزمان کی جے آئی ٹی کی رپورٹ تاحال موصول نہیں ہوئی۔خیال رہے کہ 6 جون 2019 کو میجر ثاقب کو اے ٹی ایم کے باہر ملزمان نے فائرنگ کر کے قتل کیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں