فنڈز نہ ملے تو اس بار ۔۔!! پی ٹی آئی کے ناراض باغی گروپ نے عمران اینڈ کمپنی کو فائنل الٹی میٹم دے دیا

لاہور (ویب ڈیسک) پی ٹی آئی کے ’’ سپرمیسی آف پارلیمنٹ ‘‘کے گروپ کی تشکیل کے معاملے پر تحفظات رکھنے والے تحریک انصاف کے ارکان نے خاموشی توڑ دی، گروپ کے سربراہ غضنفر علی چھینہ نے کہاہے کہ فنڈز نہ ملے تو پارٹی میں رہنا مشکل ہو گا،کسی دوسری پارٹی سے رابطہ نہیں کیا،

اگر فنڈزنہ ملے تو پھر کچھ سوچیں گے ، گروپ کے رکن سردار شہاب الدین نے کہا کہ وزیراعظم نے جس کو وزیراعلیٰ نامزد کیا اس کی حمایت کریں گے ، ہم اپنے حلقوں کے ترقیاتی کاموں کے حوالے سے وزیراعلیٰ سے ملے تھے ،ناراض ارکان کی گزشتہ روز وزیراعلیٰ پنجاب سے ملاقات طے تھی مگر وزیراعلی عثمان بزدار کے لاہور میں نہ ہونے کی وجہ سے ملاقات نہ ہو سکی، اس دوران وزیر اعلیٰ پنجاب نے پی ٹی آئی اراکین کے تحفظات کے پیش نظر ترقیاتی سکیموں اور فنڈز کی مکمل تفصیلات منگوا لیں۔ دوسری جانب پنجاب اسمبلی میں پی ٹی آئی کے ناراض گروپ کے رکن سردار شہاب کا کہنا ہے کہ اگر وزیراعلیٰ پنجاب تبدیل ہوتے ہیں تو وزیراعظم کے حکم کی تعمیل کریں گے۔ تحریک انصاف کے ناراض گروپ نے ایک اور قدم اٹھاتے ہوئے وزارت اعلیٰ کی تبدیلی کی صورت میں اپنا فیصلہ سنا دیا۔ سردار مہتاب نے واضح کر دیا کہ اگر وزیراعلیٰ کی تبدیلی ہوتی ہے تو ہم وزیراعظم کے حکم کی تعمیل کریں گے ، وزیراعظم پنجاب کے لیے جس کو بھی نامزد کریں گے ہمیں قبول ہو گا۔ غضنفر عباس چھینہ نے تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ہم بالکل ناراض ہیں کیونکہ ہمیں فنڈز نہیں مل رہے جلد مشاورت میں تمام چیزیں طے کر لیں گے ، ہم سے اپوزیشن سمیت کسی اور جماعت نے رابط نہیں کیا ، اگر فنڈز نہ ملے تو پھر مستقبل بارے سوچنا پڑیگا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں