تُرکوں نے 600 سال تک ہندوستان پر حکومت کی۔۔۔!!! جب عمران خان نے یہ کہا تو رجب طیب اردگان نے کیا کِیا؟ نئی بحث چھڑ گئی

اسلام آباد( نیوز ڈیسک) وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ ترک صدر رجب طیب اردگان کے پاکستان آنے سے ہمیں خوشی ہوئی ہے کیونکہ ترکی ہی وہ ملک ہے جس نے 600 سال ہندوستان پر حکومت کی ہے۔ وزیر اعظم عمران خان کو ایک مرتبہ پھر سے تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور یہ

تنقید سوشل میڈیا پر ایک خاص طبقہ کر رہا ہے، ترک صدر رجب طیب اردگان کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان رجب طیب اردگان کے پاکستان آنے کی بہت خوشی ہو رہی ہے، پاکستان اور ترکی کا صدیوں پرانا رشتہ ہے وہ بھی اس لیے کیونکہ ترکوں نے 600 سال ہندوستان پر حکومت کر رکھی ہے۔ وزیر اعظم عمران خان کے اس بیان کو ایک خاص طبقے کی جانب سسے شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور کہا جا رہا ہے کہ عمران خان شاید بھول گئے ہیں، لیکن اگر تاریخ کے اوراق کھول کر دیکھا جائے تو پندوستان پر 1200 سال مسلمانوں نے حکومت کر رکھی ہے۔ وزیر اعظم اور ترک صدر کی مشترکہ پریس کانفرنس آپ بھی دیکھیں:

Prime Minister of Pakistan Imran Khan & President of Turkey Recep Tayyip Erdoğan Joint Press Conference in Islamabad (14.02.20)

Prime Minister of Pakistan Imran Khan & President of Turkey Recep Tayyip Erdoğan Joint Press Conference in Islamabad (14.02.20)#PakTurkFriendship

Gepostet von Imran Khan (official) am Freitag, 14. Februar 2020

علاوہ ازیں صدر رجب طیب اردوان نے وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ 3 سال بعد پاکستان کا دورہ کرنے پر بہت خوش ہوں۔ وزیراعظم عمران خان اور ان کی کابینہ کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔ پاکستان کو اپنا گھر سمجھتا ہوں ، ہرموقعے پر پاکستان ک ساتھ دیں گے۔ ترکی پاکستان کے ساتھ کھڑا ہے اور ہمیشہ کھڑا رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ 13معاہدے پاک ترک تعلقات کا مظہر ہیں۔2023ء تک تجارت کا حجم 5 ارب ڈالر کرنے پر اتفاق کیا گیا ہے۔ ترک صدر نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر تشویش ہے، کشمیر ایشو کا حل اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق حل ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ افغان امن عمل کی حمایت کرتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں