کیا آپ کو ٹرین کے بغیر چین نہیں تھا؟ شہباز شریف کی اورنج لائن ٹرین کا سالانہ نقصان ساڑھے 17 ارب روپے، اگر قرض سے بچنا ہے تو کیا کرنا ہوگا؟ فیصلہ پاکستانیوں پر چھوڑ دیا گیا

اسلام آباد( نیوز ڈیسک ) وزیر اعلیٰ پنجاب کے سابق ترجمان اور تحریک انصاف کے سرگرم رہنماء ڈاکٹر شہباز گل کا کہنا ہے کہ شہباز شریف کی اورنج ٹرین کا کرایہ کم از کم 285 روپے ہو تو بغیر نقصان چلتی ہے۔ اگر سبسڈی دے کر 50 روپے رکھا جائے تو 11 ارب کا سالانہ نقصان،

6.5 ارب کا سود۔ یہ سارا پیسہ آئے گا قرضے سے اور وجہ بنے گا اور مہنگائی کی۔ لیکن ان سے کوئ نہیں پوچھے گا کہ آپ کو ٹرین کے بغیر چین نہیں تھا۔ تفصیلات کے مطابق اس وقت ہاٹ ایشو یہ ہے کہ عمران خان حکومت جان بوجھ کر اورنج لائن ٹرین کو نہیں چلنے دے رہی لیکن اس ٹرین کے حوالے سے اب ڈاکٹر زشہباز گِل بھی میدان میں آگئے ہیں اور حیرت انگیز حقائق بیان کر دیئے ہیں،سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں ڈاکٹر شہباز گِل کا کہنا ہے کہ ’’شہباز شریف کی اورنج ٹرین کا کرایہ کم از کم 285 روپے ہو تو بغیر نقصان چلتی ہے۔ اگر سبسڈی دے کر 50 روپے رکھا جائے تو 11 ارب کا سالانہ نقصان۔ 6.5 ارب کا سود۔ یہ سارا پیسہ آئے گا قرضے سے اور وجہ بنے گا اور مہنگائی کی۔ لیکن ان سے کوئ نہیں پوچھے گا کہ آپ کو ٹرین کے بغیر چین نہیں تھا‘‘

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں