طالبان سے بچنے کیلئے ایک پاکستانی لڑکی لڑکا بن گیا ۔۔ اور کسی کو پتہ بھی نہ چلا، طالبان کو دھوکہ دینے والی یہ لڑکی کس مشہور سیاستدان کی بہن کی تھی؟

لاہور(ویب ڈیسک) پاکستان کی نمبر1فیمیل سکوائش پلیئر ماریہ طور پیکی دنیا بھر میں سکوائش کی خواتین کھلاڑیوں کی درجہ بندی میں 49ویں نمبر ہیں،، طور پیکی نے جنوبی وزیرستان کے قدامت پسند علاقے میں آنکھ کھولی اور وہیں پلی بڑھیں، چونکہ وزیر ستان جیسے علاقے میں طالبان کا تسلط ہے،،جس کی

بنا پر انھیں لڑکوں کا روپ دھار کر کھیلنا پڑاتاتھا،، طالبان سے بچنے کیلئے پاکستانی لڑکی لڑکا بن کر پوری دنیا میں بے حد مشہور ہو گئی اور کسی کو پتہ بھی نہ چلا ،، پاکستان کی نمبر1فیمیل سکوائش پلیئر ماریہ طور پیکی دنیا بھر میں سکوائش کی خواتین کھلاڑیوں کی درجہ بندی میں 49ویں نمبر ہیں،، طورپیکی نے جنوبی وزیرستان کے قدامت پسند علاقے میں آنکھ کھولی اور وہیں پلی بڑھیں ،، انھیں بچپن سے ہی کھیلوںسے شغف تھا پس جیسے ہی لڑکپن میں قدم رکھا تو کھیل کے میدان میں کچھ کر دکھانے کے جذبے نے سر ابھارا ۔ پس اسی امنگ کے پیش نظر انھوں نے لڑکوں کا روپ دھار کر ویٹ لفٹنگ شروع کی ۔ چونکہ وزیر ستان جیسے علاقے میں طالبان کا تسلط ہے جس کی بنا پر انھیں لڑکوں کا روپ دھار کر کھیلنا پڑاتاتھا ۔طور پیکی نے حال ہی میں اپنی سوانح حیات ”اے ڈفرنٹ کائنڈ آف ڈاٹر“میں اپنی زندگی کی جدو جہد کے وزیرستان کے پہاڑوں سے کینیڈا تک کے سفر کا ذکر کیا ہے،، تاہم انکا کہنا ہے کہ یہ تو انکے سفر کی ابتداءہے،،حال ہی میں ماریہ طور پیکی نے خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے بتایا کہ انھیں سکوائش کے علا وہ ٹینس کھیلنا بھی بے حد پسند ہے ۔ زندگی میں متاثر کن شخصیات کے حوالے سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں انکا کہناتھا کہ انھیں محمد علی ، ٹینس سٹار روجر فیڈیرراور سرینا ولیمز بے حد پسند ہیں ، یاد رہے کہ وہ عائشہ گلالئی کی بہن ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں