اسلام آباد میں پاک فوج کے اعلیٰ افسر قتل

اسلام آباد(ہاٹ لائن ) وفاقی دارالحکومت کے آئی 8 سکیٹر میں ڈکیتی مزاحمت پر فائرنگ کر کے پاک فوج کے افسر کو قتل کر دیا گیا، پولیس تاحال ملزموں کا سراغ لگانے میں ناکام ہے۔
پاکستان آرمی کے میجر ذیشان قمر اپنی اہلیہ اور بچے کے ساتھ اپنے گھر میں موجود تھے کہ شام 4 بج کر 45 منٹ کے قریب تین مسلح ملزم ان کے گھر داخل ہوئے۔ میجر ذیشان قمر نے گھر میں داخل ہونے والے پہلے ملزم کو پکڑ لیا لیکن باقی دو ملزموں نے فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں وہ شہید ہو گئے جبکہ ملزم فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔
میجر ذیشان کو پاکستان انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز(پمز) ہسپتال لے جایا گیا تاہم سینے میں گولی لگنے کے باعث وہ جانبر نہ ہو سکے۔ پولیس نے نامعلوم ملزموں کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کر لیا ہے تاہم ملزموں کا سراغ لگانے میں تاحال کامیاب نہیں ہو سکی ہے۔
انڈسٹریل ایریا تھانے کے ایس ایچ او انسپکٹر سجاد بخاری کا کہنا ہے کہ پولیس واقعے کی تحقیقات کر رہی ہے لیکن ابھی تک کوئی سراغ نہیں ملا۔ انہوں نے کہا کہ میجر ذیشان قمر کی نعش کا پمز ہسپتال میں پوسٹمارٹم کیا گیا اور میڈیکل رپورٹ کا انتظار ہے۔ دوسری جانب شہید میجر ذیشان کی نماز جنازہ وفاقی دارالحکومت میں ادا کی گئی جبکہ ان کی تدفین آبائی علاقے نوابشاہ میں کردی گئی۔انڈسٹریل ایریا تھانے کے ایک اور افسر کا کہنا ہے کہ جلد از جلد تحقیقات کیلئے اس کیس کی تحقیقات حال میں قائم کی گئی ہومی سائیڈ تحقیقاتی یونٹ کے حوالے کر دی گئی ہیں