نومنتخب امریکی صدرٹرمپ سےپاکستانیوں کےخدشات بڑھ گئے

اسلام آباد(ہاٹ لائن) امریکا میں نئے صدر کی آمد کے ساتھ ہی پاکستانیوں کی پریشانی بڑھ گئی۔ ڈونلڈ ٹرمپ کے جارحانہ بیانات کے باعث پاکستانیوں کو خدشہ ہےکہ نئے امریکی صدر کا جھکاؤ بھارت کی جانب ہوگا۔
وائٹ ہاؤس کے نئے مکین کی آمد نے جہاں دنیا بھرکو اس چناؤ پر حیران کیا وہیں پاکستانی بھی تذبذب کا شکار ہوگئے ہیں۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی انتخابی مہم کے دوران جو جارحانہ پن اختیار کیا وہ مسلمانوں کے لیے پریشان کن ہے۔ ڈونلڈ ٹرمپ کا کہناتھاکہ وہ صدر بننے کی صورت میں دہشت گرد خطوں سے لوگوں کے امریکا آمد پر پابندی عائد کردیں گے۔ اس کے علاوہ ٹرمپ نے پاکستانیوں کو بھی اپنے بیانات میں آڑے ہاتھوں لیا تھا۔ پاکستان اور امریکا کے درمیان تعلقات حالیہ مئی میں ملا منصور کی میزائل حملے میں ہلاکت کے بعد سے تبدیل ہوگئے ہیں۔امریکاکی جانب سے بارہا پاکستان پر زور دیاجاتا رہاکہ دہشت گردی کے خلاف جنگ کو تیز کیاجائے۔
ٹرمپ نے امریکی چینل کو مئی میں ایک انٹرویومیں کہاتھاکہ وہ افغانستان میں مزید فوجی رکھنے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔ انھوں نے اپنے اس ممکنہ فیصلے کے دفاع میں کہا تھاکہ امریکی فوجیوں کی موجودگی اس لیے ہوگی کیوں کہ افغانستان کاپڑوسی ملک پاکستان ہے جس کےپاس جوہری ہتھیار موجود ہیں۔ ڈونلڈ ٹرمپ کے صدر منتخب ہونےپربھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے خیرمقدمی ٹویٹ میں بھارت کے ساتھ مل کر کام کرنے کا عزم ظاہر کیا گیاتھا