asad

ڈونلڈ ٹرمپ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں اتحادی ہوں گے: بشار الاسد

شام(ہاٹ لائن) بشار الاسد کا کہنا تھا کہ ہم ٹرمپ کے بارے میں کچھ نہیں کہہ سکتے کہ وہ کیا کرنے جا رہے ہیں لیکن اگر انھوں نے دہشت گردوں کے خلاف لڑائی کی تو یقیناً ہم فطری اتحادی ہونے جا رہے ہیں۔
انھوں نے کہا امریکی انتظامیہ میں متلافی فورسز کے بارے میں کیا، مرکزی میڈیا ان کے خلاف تھا، وہ اس سے کیسے نمٹ سکتے ہیں؟ یہی وجہ ہے کہ ابھی تک یہ ہمارے لیے مشکوک ہے اور اسی لیے ہم ٹرمپ کے بارے میں فیصلہ کرنے میں بہت محتاط ہیں۔امریکہ کی شام کے بارے میں موجودہ پالیسی یہ ہے کہ دولت اسلامیہ اور دیگر جہادیوں کے خلاف کارروائی اور صدر بشار الاسد کے مخالف معتدل باغیوں کی حمایت کی جائے۔شامی صدر بشار الاسد ایسے گروہوں کو دہشت گرد سمجھتے ہیں۔ بشار الاسد نے ایک بار پھر امریکہ کی موجودہ پالیسی پر تنقید کرتے ہوئے کہا وہ سمجھتے ہیں کہ وہ دنیا کی پولیس ہیں، ان کا خیال ہے کہ وہ دنیا کے جج ہیں لیکن وہ نہیں ہیں۔(ا ن)