کراچی میں پنشن جاری نہ ہونے پر دل دہلا دینے والا واقعہ

کراچی (ہاٹ لائن ) کے ایم سی کے ریٹائرڈ ملازم نے حکام کی جانب سے پنشن جاری نہ کئے جانے پر سوک سینٹر کی عمارت سے خودکشی کرلی۔
نمایندہ کراچی میٹرو پولیٹن کارپریشن کا ریٹائرڈ ملازم محمد اقبال گزشتہ کئی روز سے اپنی پنشن کے اجرا کے لیے سوک سینٹر میں متعلقہ حکام کے دفاتر کے دھکے کھا رہا تھا۔ پر مرتبہ اس کے کاغذات میں کوئی نہ کوئی خامی نکال دی جاتی۔ پیر کی صبح بھی جب وہ اپنی پنشن کے سلسلے میں سوک سینٹر پہنچا تو ایک بار پھر اسے بہانے بناکر ٹرخا دیا۔
حکام کی جانب سے بہانے بازی پر اقبال دلبرداشتہ ہوکر عمارت کی چھٹی منزل سے کود گیا جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی وگیا۔ وہاں موجود افراد نے اقبال کو طبی امداد کے لیے اسپتال لے جانے کی کوشش کی تاہم وہ راستے میں ہی دم توڑ گیا۔
پولیس کا کہنا ہے کہ خودکشی کرنے والے ریٹائرڈ سرکاری ملازم کی لاش کو پوسٹم مارٹم اور ضابطے کی دیگر کارروائی کے بعد لواحقین کے حوالے کردیا جائے گا۔
دوسری جانب کراچی کے ڈپٹی میر ارشد وہرا نے واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ خود کشی کرنےوالے اقبال کو ہر ماہ پنشن ملتی تھی ،کے ایم سی اور پولیس معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔ انہوں نے اقبال کی پنشن کا رکارڈ متعلقہ محکمے سے منگوالیا ہے،متعلقہ محکمے سے معلومات ملنے پر اقبال سے متعلق بتائیں گے۔