افسران کا آشیر باد ، فٹ پاتھ قبضہ مافیہ کی تحویل میں

بھاول نگر(نامہ نگار) ضلعی افسران کی عدم توجہی یا مکمل آشیرباد بھاولنگر کی فٹ پاتھ اور شاہرائیں قبضہ مافیا کی تحویل میں ، دکانداروں نے تھڑوں کی آڑ میں شاہراہوں پر مکمل قبضہ جما لیا ، پیدل چلنے والے پریشان ، حادثات بڑھ گئے ، عوامی مشکلات میں اضافہ جبکہ ارباب اختیار لمبی تان کر سو گئے ، تفصیلات کے مطابق بھاولنگر میں اگر ناجائز تجاوزات کی بات کی جائے تو 90 فیصدعوام کا مسئلہ شاہرات پر غیر قانونی قبضہ ہے جس نے شہریوں کا پیدل چلنا بھی محال کر دیا ہے ، اس کی وجہ سے یہاں کی مین شاہرات ہوں یا پھر بازارناجائز تجاوزات کی وجہ سے بازار سکڑ کر سرنگیں بن گئے ہیںجس کی وجہ سے اندورن شہربازاروں میں خریداری کے لئے آنے والی خواتین اور بچوں کو شدید مشکلات کاسامنا کرنا پڑتا ہے یہاں خواتین پر ہی موقوف نہیں ہے بلکہ دفتروں میں جانے والے شہری بھی شدید مشکلات کا شکار ہیں اس پر ستم ظریفی یہ ہے کہ ضلعی افسران اور تحصیل میونسپل ایڈمنسٹریشن بھاولنگر اپنے دفاتر میں خواب خرگوش کے مزے لے رہی ہے گزشتہ کئی سالوں سے ناجائز تجاوزات کے خاتمے کی بجائے ٹال مٹول سے کام لیا جارہا ہے اس کا تمام ملبہ شہری ایم پی اے رانا عبدالرو¿ف کے سر ڈال دیا جاتا ہے کہ وہ شہر میں ناجائز تجاوزات کے خاتمے میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے شہری حلقوں کی جانب سے شدید احتجاج کے بعد اگر کبھی کبھار آپریشن کیا بھی جائے تو وہ چند گھنٹوں کے بعد ہی رانا عبدالرو¿ف کا نام لے کر روک دیا جاتا ہے کہ اس کا ٹیلی فون آگیا ہے آپریشن بند کر دیا جائے یوں چند گھنٹوں کے بعد ہی قبضہ مافیا دوبارہ پوری آب و تاب کے ساتھ شہریوں اور راہ گیروں کے لئے عذاب بن جاتا ہے۔