وکلا کے بھوک ہڑتالی احتجاجی کیمپ ، جوش و خروش کم نہ ہو سکا

سیالکوٹ (بیورورپورٹ)وکلا کے بھوک ہڑتالی احتجاجی کیمپ کے چھٹے روز بھی شرکا کاجوش وخروش کم نہ ہوسکا۔ گذشتہ روز بھی ڈسٹرکٹ پولیس آفیسرکے دفتر کے باہر سیالکوٹ ڈسٹرکٹ بار کی جانب سے لگائے ہوئے بھوک ہڑتالی احتجاجی کیمپ کے چھٹے روز بھی وکلا پرجوش رہے جبکہ احتجاجی کیمپ میں وکلا کے علاوہ سماجی و سیاسی تنظیموں اور مختلف طبقہ فکر کے افراد نے بھی شرکت کرکے وکلا سے اظہا ریکجہتی کیا۔ قبل ازیں ڈسڑکٹ بار سیالکوٹ میں صدر مقصود احمد بھٹی کی زیر صدارت ایک اہم اجلاس منعقد ہوا جس میں سیکرٹری بار سرفراز گھمن، ڈسکہ بار کے صدر ناصر گھمن، پسرور بار کے سیکرٹری غلام مصطفی باجوہ اور سمبڑیال بار کے صدر کے علاوہ، عالیہ حنا ، عظمت باجوہ، جاوید اقبال مغل، ارشد بگو،رانا شاہد امین، شاہد میر،چوہدری شوکت و دیگر موجود تھے۔ اجلاس میں کہا گیا کہ اگر اگلے جمعہ تک وکیل اور اسکے کزن کے قتل میں ملو ث ملزم کو گرفتار نہ کیا گیا تو ضلع کو سیل کردیا جائے گے اور تھانہ رنگپورہ کے خلاف احتجاج کریں گے۔ اجلاس میں ایک قرار داد بھی پیش کی گئی جس میں ملزمان کی فوری گرفتاراور چالان عدالت میں جلد پیش کرنے کے علاوہ ملزمان کی پشت پناہی کرنے والوں کو باور کرایا گیا کہ اگر انہوں نے ملزمان کی پشت پناہی نہ چھوڑی تو ان کا محاصبہ کیا جائے گا۔