بھارت انگلینڈ پہلاٹیسٹ:گوروں کی شانداربیٹنگ کےسامنےبھارتی بےبس

راجکوٹ ( ہاٹ لائن) جو روٹ، معین علی اور اسٹوکس کی شاندار سنچریوں کی بدولت انگلینڈ نے بھارت کے خلاف پانچ میچوں کی سیریز کے پہلے ٹیسٹ میچ کی پہلی اننگز میں 537 رنز کا پہاڑ کھڑا کردیا۔ تینوں کھلاڑیوں نے عمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی ٹیم کی پوزیشن مستحکم بنا دی، جو روٹ 124 اور معین علی ناقابل شکست 117 اور بن اسٹوکس 128 رنز کے ساتھ نمایاں رہے، جو روٹ نے اپنے ٹیسٹ کیریئر کی گیارہویں، معین علی اور بین اسٹوکس نے اپنی چوتھی چوتھی سنچری بھی مکمل کی، بھارت کی طرف سے راویندرا جڈیجا نے 3، محمد شامی، یادو اور ایشون نے 2,2 کھلاڑیوں کو آﺅٹ کیا۔ بھارت نے جواب میں بغیر کسی نقصان کے 63 رنز بنالئے۔ انگلینڈ کی اننگز کا اسکور برابر کرنے کےلئے مزید 474 رنز کی ضرورت ہے.
راجکوٹ کے مقام پر انگلینڈ کی ٹیم نے اپنی پہلی ادھوری اننگز 311 رنز 4 کھلاڑی آﺅٹ پر دوبارہ شروع کی تو معین علی 99 اور اسٹوکس 19 رنز پر کھیل رہے تھے۔ معین علی انگلینڈ کے پانچویں آﺅٹ ہونے والے کھلاڑی تھے جو اپنے گزشتہ روز کےاسکور میں مزید 18 رنز کا اضافہ کرنے کے بعد 117 رنز بناکر آﺅٹ ہوگئے۔ یہ ان کے ٹیسٹ کیریئر کی چوتھی سنچری تھی۔ وکٹ کیپر بلے باز بیرزاسٹو انگلینڈ کے چھٹے آﺅٹ ہونے والے کھلاڑی تھے جو 46 رنز بناکر محمد شامی کی گیند پر ساہا کے ہاتھوں کیچ آﺅٹ ہوگئے۔ ووکیز ساتویں آﺅٹ ہونے والے کھلاڑی تھے جو 4 رنز بناکر جڈیجا کی گیند پر ساہا کے ہاتھوں کیچ آﺅٹ ہوگئے عادل رشید انگینڈ کے آٹھویں آﺅٹ ہونے والے کھلاڑی تھے جو 5 رنز بناکر جڈیجا کی گیند پر یادوو کے ہاتھوں کیچ آﺅٹ ہوگئے۔ اس موقع پر بن اسٹوکس کی عمدہ اننگز کا بھی خاتمہ ہوگیا اور وہ اپنی سنچری مکمل کرنے کے بعد 128 رنز بناکر یادوو کی گیند پر ساہا کے ہاتھوں کیچ آﺅٹ ہوگئے۔ظفرانصاری انگینڈ کے آخری آﺅٹ ہونے والے کھلاڑی تھے جو 32 رنز بناکر مشرا کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آﺅٹ ہوگئے۔ اسٹورٹ براڈ 6 رنز کے ساتھ ناٹ آﺅٹ رہے اور یوں انگلینڈ کی ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 537 رنز بناکر آﺅٹ ہوگئی۔
بھارت کی طرف سے راویندرا جدیجہ نے 3، محمد شامی، یادو اور ایشون نے 2,2 کھلاڑیوں کو آﺅٹ کیا۔ جواب میں بھارت کی طرف سے مرلی وجے اور گوتم گمبھیر نے اننگز کا آغاز کیا۔ میچ کے دوسرے روز جب کھیل ختم ہوا تو بھارت نے جواب میں بغیر کسی نقصان کے 63 رنز بنالئے۔انگلینڈ کی اننگز کا اسکور برابر کرنے کےلئے مزید 474 رنز کی ضرورت تھی۔