کم اننگز میں 3 ہزار رنز، اسٹیون اسمتھ، جاوید میانداد کے ہمسر بن گئے

تیسرے تیز ترین 23 سنچریاں مکمل کرنے والے بیٹسمین کا اعزاز بھی حاصل کرلیا۔

میلبورن: آسٹریلوی کپتان اسٹیون اسمتھ کے بیٹ سے ریکارڈز کا سیلاب امڈ آیا، ایک ایشز سیریز میں سب سے زیادہ سنچریوں میں ڈان بریڈ مین کے ہمسر بن گئے جب کہ ہوم میچزکے دوران کم اننگز میں 3 ہزار رنز کے سنگ میل تک پہنچنے میں جاوید میانداد کوجوائن کرلیا۔

انگلینڈ کے خلاف چوتھے ایشز ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں اسٹیون اسمتھ نے ناٹ آؤٹ 102 رنز بنائے، اس طرح وہ ڈان بریڈ مین کے بعد ایک ایشز سیریز میں تین یا اس سے زائد سنچریاں اسکور کرنے والے پہلے آسٹریلوی کپتان بن گئے ہیں، بریڈ مین یہ اعزاز دو مرتبہ 136-37 اور 1938 میں حاصل کرچکے ہیں۔

یہ اسمتھ کی 23 ویں سنچری ہے جوکہ انھوں نے110اننگزمیں اسکورکی، 23 ٹیسٹ سنچریوں تک پہنچنے میں دو بیٹسمین ان سے زیادہ تیز نکلے جن میں سے ایک ڈان بریڈ مین ہیں جنھوں نے 59 اننگزمیں یہ اعزاز پایا جبکہ بھارت کے سنیل گاوسکر ایک کم سیریز میں 23 ویں سنچری اسکور کرنے میں کامیاب ہوئے تھے۔
یہ اسمتھ کی بطور کپتان اپنی 53 ویں اننگز میں 15 ویں سنچری ہے، صرف چار دوسرے ایسے کپتان ہیں جو اسمتھ سے کم اننگزکھیل کراس مقام پر پہنچے تھے۔ اسمتھ نے اپنے ملک میں 3 ہزار ٹیسٹ رنز بھی مکمل کرلیے ہیں، یہ انکی آسٹریلیا کیلیے49 ویں ٹیسٹ اننگز تھی، صرف بریڈ مین نے ان سے کم اننگز میں اپنے ملک میں 3000 رنز اسکور کرنے کا اعزاز حاصل کیا جبکہ پاکستان کے عظیم بیٹسمین جاوید میانداد نے بھی کوہلی کی جیسی 49 ویں اننگز میں ہوم وینیوز پر 3 ہزار رنزمکمل کیے تھے۔

گزشتہ دو ایشز سیریز کے دوران اسمتھ نے 15 اننگز میں 5 سنچریاں اسکور کیں، انگلینڈ میں 2015 کی ایشزسیریز میں انھوں نے 85.53 کی اوسط سے رنز اسکور کیے، اس سے قبل اسمتھ نے 831 ایشز رنز 37.77 کی ایوریج سے اسکورکیے تھے۔رواں برس اسمتھ نے 1305 رنز 76.76 کی ایوریج سے اسکور کیے، یہ مسلسل چوتھا برس ہے جب انھوں نے ایک کیلنڈر ایئر میں 1000سے زائد رنز اسکور کیے ہیں۔