آنکھ میں تکلیف :راس ٹیلر آﺅٹ ‘ مچل سینٹنر کو شامل

کرائسٹ چرچ (ہاٹ لائن) پاکستان کیخلاف 25 نومبر سے شروع ہونے والے دوسرے ٹیسٹ کیلئے نیوزی لینڈ نے اپنے اسکواڈ میں ایک تبدیلی کرتے ہوئے جمی نیشام کی جگہ آل راو¿نڈر مچل سینٹنر کو شامل کیا ہے جبکہ آنکھ کی تکلیف میں مبتلا سینئر بیٹسمین راس ٹیلر کی شرکت اسپیشلسٹ ڈاکٹر کی رپورٹ سے مشروط ہے۔ کیوی کوچ مائیک ہیسن کے مطابق راس ٹیلر کو میدان میں اتارنے سے قبل ان کی بائیں آنکھ میں تکلیف کو بھی دیکھنا ہوگا جو بیٹنگ اور کیچنگ میں مسائل کا باعث بن سکتی ہے لہٰذا ان کے بارے میں حتمی فیصلہ بعد میں کیا جائے گا۔ واضح رہے کہ ضرورت پڑنے پر ناردرن ڈسٹرکٹ کے بیٹسمین ڈین براو¿نلی کو ٹیم میں شامل کیا جا سکتا ہے جو راس ٹیلر کے متبادل کی حیثیت سے اسکواڈ میں موجود ہیں۔ بھارت کے گزشتہ دورے میں کلین سوئپ کا شکار ہونے والی کیوی ٹیم میں واحد مثبت پہلو مچل سینٹنر ہی تھے جو تین ہفتے قبل کلائی کے فریکچر سے صحتیابی کے بعد ٹیم میں واپس آ گئے ہیں جن کیلئے جمی نیشام کو جگہ خالی کرنا پڑی ہے۔ کیوی چیف سلیکٹر گیون لارسن نے کہا کہ مچل سینٹنر کا دوسرے ٹیسٹ سے قبل فٹ ہو کر دوبارہ ٹیسٹ ٹیم کا حصہ بننا خوش آئند ہے اور اگر ضرورت پڑی تو دو اسپنرز کو بھی میدان میں اتارا جا سکتا ہے۔ کین ولیمسن کی زیرقیادت ٹیم میں ٹوڈ ایسٹل، ٹرینٹ بولٹ، کالن ڈی گرینڈ ہوم، میٹ ہنری، ٹام لیتھم، ہنری نکولس، مچل سینٹنر، راس ٹیلر، نیل ویگنر، ڈین براو¿نلی، جیت راول، ٹم سائوتھی، اور بریڈلے جان واٹلنگ شامل ہیں۔