ارجنٹائن میں ایک ایسی مچھلی پکڑ ی گئی کہ مچھیروں کی ہوائیاں اڑ گئیں

بیونس آئرس (ہاٹ لائن) ارجنٹائن کے صوبے کورڈوبا میں مچھیروں نے ایک ایسی مچھلی پکڑ لی ہے کہ جسے دیکھ کر پورے شہر میں خوف و ہراس پھیل گیا ہے۔
غیر ملکی خبر رساں اداروں نے کے مطابق مچھیروں نے تین آنکھوں والی مچھلی پکڑی ہے جسے دیکھنے کے بعد صوبے بھر کے لوگ خوف و ہراس میں مبتلا ہیں اور متجسس ہیں کہ آخر اس مچھلی کی تیسری آنکھ کا راز کیا ہے اور یہ یہاں کیسے پہنچ گئی ہے۔ ارجنٹائن کے خبر رساں اداروں کے مطابق یہ مچھلی شورو دی آگوا کیلینٹ نامی پانی کے ذخائر سے پکڑی گئی ہے اور یہاں ایک ایٹمی پلانٹ کا پانی بھی گرتا ہے۔
رپوٹ کے مطابق پانچ مچھیرے اس وقت حیرت اور خوف کا شکار ہو گئے جب انہوں نے یہ تین آنکھوں والی مچھلی پکڑی۔ انہوں نے کہا کہ ” رات کے وقت ہم نے ایک مچھلی پکڑی اور اسے جب اوپر کھینچا تو ہمیں شک گزرا کہ اس میں کچھ عجیب بات ہے لیکن اندھیرے کے باعث صحیح طرح معلوم نہ ہو سکا اور پھر جب لالٹین کی روشنی میں دیکھا تو ہمارے اوسان ہی خطاء ہو گئے کیونکہ وہ مچھلی دو نہیں بلکہ تین آنکھوں سے ہماری جانب دیکھ رہی تھی۔“
مچھیروں کا کہنا ہے کہ وہ کئی سالوں سے یہاں مچھلیاں پکڑ رہے ہیں لیکن اس طرح کا واقعہ پہلی مرتبہ پیش آیا ہے۔ مچھیروں کا کہنا ہے کہ ابھی تک اس مچھلی کا کوئی معائنہ نہیں کیا گیا اس لئے اس واقعے کو ایٹمی پلانٹ کے پانی کےساتھ جوڑنا صحیح نہیں ہے اور اگر آپ نیوکلیئر سینٹر کے بارے میں بات کرتے بھی رہیں گے تو ڈر کو بھگا نہیں سکتے۔
مچھیروں کیساتھ ساتھ دیگر لوگ بھی اتنے خوفزدہ ہیں کہ انہوں نے اس مچھلی کو کھانے سے صاف انکار کر دیا ہے اور فیصلہ کیا ہے کہ اسے معائنے کیلئے حکومتی اداروں کو دیدیا جائے گا۔(ن ی )