نیوزی لینڈ میں 7.8 شدت کا زلزلہ، پاکستانی کرکٹ ٹیم ہوٹل سے باہر آگئی

کراسٹ چرچ ( ہاٹ لائن ) نیوزی لینڈ میں 7.8 شدت کے زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے تاہم کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔
غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں 7.8 شدت زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے تاہم کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی، مقامی میڈیا کے مطابق زلزلے کے جھٹکوں کے باعث لوگ خوفزدہ ہوکر اپنے گھروں سے باہر نکل آئے جب کہ لوگوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے کافی دیر تک زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے۔ کرائسٹ چرچ کے پولیس ترجمان کا کہنا ہے کہ زلزلے کے نتیجے میں ابھی تک صرف ایک سڑک پر گڑھا پڑنے کی خبر سامنے آئی ہے تاہم مزید کسی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ملی جب کہ امدادی حکام کا کہنا ہے کہ صورتحال کا جائزہ لیا جارہاہے ہے تاہم لوگ احتیاط سے کام لیں۔
زلزلے کے جھٹکوں کے باعث نیوزی لینڈ کے شہر نیلسن میں موجود پاکستانی کرکٹ ٹیم اور کرائسٹ چرچ میں موجود ویمن کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی ہوٹل سے باہر آگئے، پاکستانی ٹیم کو آج نیلسن سے کرائسٹ چرچ کے لیے روانہ ہونا تھا۔ دوسری جانب پاکستانی کرکٹ ٹیم کے مینجر وسیم باری نے ایکسپریس نیوز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ نیوزی لینڈ کے وقت کے مطابق زلزلہ رات 11 بجے آیا اور زلزلہ بہت شدید تھا، زلزلے کے وقت پاکستانی ٹیم ہوٹل کی چھٹی منزل پر تھی تاہم تمام کھلاڑی خیریت سے ہیں۔
امریکی جیولیو جیکل سروے کے مطابق زلزلے کا مرکز کرائسٹ چرچ سے دور شمال مشرق میں 91 کلومیٹر اور گہرائی 11 کلومیٹر تھی، غیرملکی خبر رساں ایجنسی کا کہنا ہے کہ زلزلے کے باعث پیداہونے والی سونامی نیوزی لینڈ کے شمال مشرقی علاقوں سے ٹکراگئی ہے جب کہ اس دوران تقریبا 3 فٹ اونچی لہریں اٹھیں،انتظامیہ نے لوگوں کو محفوظ مقامات کی جانب منتقل ہونے کی ہدایات جاری کردی ہیں۔