افغانستان میں نماز جنازہ کے دوران دھماکا، 18 افراد ہلاک


افغانستان میں سابق ڈسٹرکٹ چیف کی نماز جنازہ کے دوران ہونے والے دھماکے سے 18افراد ہلاک اور 14 زخمی ہوگئے.

افغان صوبے ننگرہار کے دارالحکومت جلال آباد کے علاقے ضلع ہسکہ مینا کے سابق ڈسٹرکٹ چیف کی نماز جنازہ ادا کی جا رہی تھی کہ اچانک دھماکا ہوگیا ۔

دھماکے کے نتیجے میں ابتدائی طور پر 12 افراد کے ہلاک ہونے کی خبر سامنے آئی تھی جس میں اب اضافہ ہوچکا ہے اور ہلاکتیں 18 تک پہنچ گئی ہیں۔

تاحال کسی تنظیم کی جانب سے واقعے کی ذمہ داری قبول نہیں کی گئی۔ ابتدائی طور پر ازیں اسے خود کش دھماکا قرار دیا جارہا تھا تاہم صوبہ ننگر ہار کے گورنر کے ترجمان عطاء اللہ خوغیانی نے تصدیق کی ہے کہ دھماکا خیز مواد موٹر سائیکل میں نصب کیا گیا تھا۔