عمرا ن خان اور طاہر القادری اختلافات ختم،دھرنے میں شرکت کی دعوت قبول کر لی

اسلام آباد(ہاٹ لائن)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمرا ن خان اور طاہر القادری کے درمیان اختلافات ختم ہو گئے ہیں ،چیئرمین پی ٹی آئی اور عوامی مسلم لیگ کے سربراہ کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ہوا جس دوران ڈاکٹر طاہر القادری نے عمران خان کی دھرنے میں شرکت کی دعوت کو قبول کر لیاہے ۔تفصیلات کے مطابق عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کو طاہر القادری سے براہ راست رابطے پر قائل کیا جس کے بعد عمران خان نے فوری طور پر طاہر القادری کو ٹیلیفون کر کے دھرنے میں شرکت کی دعوت دی جسے عوامی تحریک کے سربراہ نے قبول کر لیاہے ۔ٹیلیفونک رابطے کے دوران دونوں رہنماﺅں نے تفصیلی بات چیت کی اور ایک ساتھ حکومت کیخلاف دھرنے میں چلنے کے عزم کا اظہار کیا ۔واضح رہے کہ رائیونڈ مارچ سے قبل تحریک انصاف اور عوامی تحریک میں کچھ اختلافات کی خبریں منظر عام پر آئیں تھی جبکہ کچھ حلقوں کا کہناتھا کہ یہ اختلاف پی ٹی آئی رہنما شیریں مزاری کے طاہر القادری کے خلاف بیان کے بعد سامنے آئے ۔عوامی تحریک نے تحریک انصاف کے رائیونڈ مارچ میں شرکت سے بھی انکارکر دیا تھا لیکن اب عمران خان نے براہ راست طاہرالقادری سے رابطہ کر کے دھرنے میں شرکت کی دعوت دے ڈالی ہےجسے طاہر القادری نے قبول کرلیاہے ۔تاہم ابھی تک اس امر کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے کہ طاہر القادری دھرنے میں خود شرکت کریں گے یا پھر صرف کارکنوں کو ہی تحریک انصاف کا ساتھ دینے کی ہدایت کی جائے گی۔