کوئٹہ میں بار بار دہشتگردی سیکیورٹی اداروں پر سوالیہ نشان ہے ، سینیٹر شاہی سید

کراچی (ہا ٹ لائن)عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے صدر سینیٹر شاہی سید، جنرل سیکریٹری یونس خان بونیری نے کوئٹہ میں پولیس ٹریننگ سینٹر پر ہونے والے حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ سانحہ سول اسپتال اور سانحہ پولیس ٹریننگ سینٹر دونوں ملکی تاریخ کے انتہائی سنگین واقعات ہیںکوئٹہ میں پے درپے دہشت گردی کے سنگین واقعات سیکیورٹی اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے ،ہاتھ چاہے اندرونی ہو یا بیرونی مقامی سہولت کار کی مدد اور مکمل و معاونت کے بغیر اتنے سنگین واقعات کا رونماءہونا ناممکن ہے ہم سوال پوچھتے ہیں کہ قومی ایکشن پلان پر اب تک عمل در آمد کیوں نہیں کیا گیا پولیس ٹریننگ سینٹر حملے میں جن گروہوں کے ملوث ہونے کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے نیشنل ایکشن پلان میں ان کے خلاف کاروائی کرنے کے واضح نکات موجود ہیںقوم کے مستقبل کے ساتھ مذید کھیلنے کا سلسلہ فی الفور بند کیا جائے اور نیشنل ایکشن پلان پر فی الفور مکمل عمل در آمد کیا جائے باچا خان مرکز سے جاری کردہ مشترکہ مذمتی بیان میں اے این پی کے رہنماﺅں نے مذید کہا کہ واقعے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے ۔ انتہائی سنگین سانحے میں ملوث سفاک عناصر کے خلاف فی افور کاروائی کی جائے اور ذمہ دارانہ کوجلد از جلد گرفتار کرکے عبرت ناک سزا دی جائے ہم واقعے میں شہید پولیس اہلکاروں کے اہل خانہ سے تعزیت کرتے ہیں اور رب العزت سے دعا گو ہیں کہ اللہ تعالیٰ شہداءکو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطاءفرمائے ۔