دھرنا روکنے کیلئے طاقت کا استعمال کیا گیا تو ملک جام کر دیں گے، چیئرمین سنی اتحاد کونسل

لاہور(ہاٹ لائن ) سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ دھرنا روکنے کیلئے ریاستی طاقت استعمال کی گئی تو پورا ملک جام کردیں گے،حکومت حالات خراب کرنے پر تُلی ہو ئی ہے، پر امن سیاسی کارکنوں کی پکڑ دھکڑ غیر جمہوری رویہ ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملک بھر میں سنی اتحاد کونسل کے عہدیداروں کے ساتھ ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوںنے کہاکہ کشتیاں جلاکر اسلام آباد کا رخ کریں گے۔آر یا پار کا وقت آگیا ہے۔ دھرنا روکنے کے حکومتی ہتھکنڈے ناکام بنانے کی منصوبہ بند ی کرلی ہے۔ اپوزیشن کی تمام جماعتیں حکومت کے غیر جمہوری طرز عمل کے خلاف آواز اٹھائیں۔ پوری قوم عمران خان کے مطالبات کی حامی ہے۔ کرپشن کے خلاف آواز اٹھانا جرم نہیں جمہوریت کی خدمت ہے۔ حکمرانوں کو غرور اور تکبر لے ڈوبے گا۔ حکمران اپنا اقتدار بچانے کیلئے پولیس کو ذاتی ملازموں کی طرح استعمال کررہے ہیں۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ دو نومبر کو شروع ہونیوالی حکومت مخالف تحریک کرپٹ حکمرانوں کا دھڑن تختہ کرکے ختم ہو گی۔ عوامی سمندر کا راستہ روکنا حکومت کے بس کی بات نہیں ۔ جمہوریت نہیں کرپٹ اور نااہل حکومت کو خطرہ ہے۔ جمہوری اور سیاسی آزادیوں پر پابندی لگاکر جمہوریت کا چہرہ مسخ کیا جارہا ہے۔ کرپٹ حکمرانوں سے نجات کی فیصلہ کن جدوجہد شروع ہو چکی ہے۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ حکمرانوں کو طاقت کا استعمال مہنگاپڑے گا۔ ہر گھر میں کرپٹ حکمرانوں سے نجات کی دعائیں مانگی جارہی ہیں۔ نواز شریف کی بادشاہت ختم ہونے کا وقت قریب ہے۔ پر امن احتجاج کو روکنے کیلئے ریاستی طاقت کا اندھا استعمال قابل مذمت ہے۔ قومی خزانے کے چوروں کو قانون کے کٹہرے میں لاکر دم لیں گے۔