کوئٹہ میں ایف سی پر نامعلوم افرادکا حملہ، 3 اہلکار شہید

کوئٹہ (ہاٹ لائن)؛ کوئٹہ میں نامعلوم افراد نے سیکیورٹی فورسز پر حملہ کردیا، فائرنگ سے 3 ایف سی اہلکار شہید ہوگئے۔
کوئٹہ کے علاقے سبزل روڈ پر نامعلوم افراد نے معمول کی ڈیوٹی پر موجود ایف سی کو نشانہ بنایا، فائرنگ کے نتیجے میں 2 اہلکار شہید اور ایک زخمی ہوگیا، جاں بحق افراد کی لاشیں اور زخمی کو اسپتال منتقل کردیا گیا۔ذرائع کے مطابق واقعے کے بعد ملزمان فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے، فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر ملزمان کی تلاش شروع کردی۔
ایف سی ترجمان کے مطابق سبزل روڈ ازبک چوک کے قریب نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے اس وقت فائرنگ کی جب ایف سی اہلکار اپنے معمول کی گشت پر تھے ۔ فائرنگ سے نائیک عارف اور سپاہی عبداللطیف موقع پر ہی دم توڑ گئے جبکہ سپاہی فیض اللہ کو تشویشناک حالت میں کوئٹہ کے بی ایم سی ہسپتال منتقل کیا گیا ، جہاں وہ زخمیوں کی تاب نہ لاتے ہوئے زندگی کی بازی ہار گیا ۔
وزیر اعلیٰ بلوچستان اور صوبائی وزیر داخلہ سرفراز بگٹی نے ایف سی پر فائرنگ کی مذمت کرتے ہوئے قیمتی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کیا جبکہ ڈی آئی جی عبدالرزاق چیمہ نے جائے وقوعہ کا معائنہ کیا اور میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کے خلاف گھیرا تنگ کر دیا ہے ۔ پاک بھارت کشیدگی کے باعث سیکورٹی فورسز کو دھمکیاں مل رہی ہیں ۔ منفی عناصر کے خاتمے تک چین نہیں لیں گے ۔