سپریم کورٹ پر حملہ کرنے والوں نے مجھے کس قانون کے تحت نظر بند کیا ہے؟ عمران خان

اسلام آباد (ہاٹ لائن ) چیئر مین تحریک انصاف عمران خان اپنی رہائش گاہ سے باہر آئے اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں سوال پوچھتا ہوں نواز شریف سے کہ کس قانون کے تحت بنی گالا میں مجھے نظر بند کیا گیا ہے اور کس قانون کے تحت شہر کو بند کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے کون سا قانون توڑا ہے۔گفتگو کے دوران انہوں نے بتایا کہ نواز شریف نے کوہاٹ میں جلسہ کیا ان پر کونسی دفعہ 144 نافذ کی گئی؟عمران خان نے کہا کہ گولیاں چلانے والوں کو نہیں چھوڑیں گے بلکہ انہیں جیلوں میں ڈالے گے ، انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ اسلام آباد آ کر بتائیں گے کہ عوام کی طاقت کیا ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دیگر اداروں کی طرح سپریم کورٹ کا بھی ٹرائل چل رہا ہے۔ آزاد عدلیہ حقوق کی حفاظت کرتی ہے۔ ان کی جمہوریت صرف اپنی کرپشن بچانے کیلئے کی جا رہی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ جیل میں ڈالنا ہے تو ڈالو ، نکل کر پھر تمہارا پیچھا ضرور کروں گا،نظر بند ہونے سے مجھے اور میرے کارکنوں کو کوئی فرق نہیں پڑتا۔ انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ 30 ہزار پولیس اہلکار مجھے نہیں روک سکتے عوامی ریلا پولیس کو بہا کر ڈی چوک لے جائے گا سپریم کورٹ پر حملہ کرنیوالوں سے کیا توقع کی جا سکتی ہے۔