آج ہر صورت بنی گالا پہنچے گے ، پرویز خٹک

نوشہرہ(ہاٹ لائن) وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے نوشہرہ میں ایک بڑے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نوشہرہ کے عوام نے مجھے ہمیشہ عزت دی۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو لوٹا جا رہا ہے، ہم نے حکمرانوں کو اٹھا کر پھینکنا ہے۔ پرویز خٹک نے کہا کہ یہ ملک انصاف اور خوشحالی کے لئے بنا ہے۔ پرویز خٹک نے عوم سے استفسار کیا کہ کیا آپ چور پسند کرتے ہیں؟ پرویز خٹک نے اعلان کیا کہ ان کے پاؤں لرز رہے ہیں، ان کی کرسیاں ہل رہی ہیں، ڈرپوک حکمران راستے بند کر رہے ہیں۔ پرویز خٹک کا مزید کہنا تھا کہ حکمرانوں کے اندر گلو بھی موجود ہیں جو پولیس کو استعمال کرتے ہیں۔ انہوں نے استفسار کیا کہ وزیر داخلہ نے کس قانون کے تحت سڑک بند کرائی؟ پرویز خٹک نے حکومت سے یہ بھی پوچھا کہ آپ صوبہ بند کریں، پاکستان بند کریں تو یہ آئینی ہے لیکن عمران خان اسلام آباد بند کرے تو یہ غیرآئینی کیوں ہے؟ پرویز خٹک نے اعلان کیا کہ عمران خان اسلام آباد بند کرنے کا حق رکھتا ہے، کسی میں جرات نہیں ہے کہ عمران خان کے بال کو بھی نقصان پہنچا سکے۔ پرویزخٹک نے یہ بھی کہا کہ کل صبح 10 بجے صوابی سے بنی گالہ کے لئے قافلہ نکلے گا اور یہ سونامی بنی گالہ جا کر رکے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہر طریقے سے بنی گالہ پہنچنا ہے، کل کے جلوس کی قیادت کروں گا، راستے کھولتے جائیں گے، کنٹینر پھینکتے جائیں گے۔ پرویز خٹک نے الزام لگایا کہ نواز شریف، چودھری نثار اور وزیر اعلیٰ پنجاب نے پٹھانوں کو للکارا ہے۔ پرویز خٹک نے حکمرانوں کو للکارتے ہوئے کہا کہ ہمیں پاکستان سے الگ کیا تو برا حشر کر دیں گے۔ انہوں نے سوال کیا کہ ہم پرامن جا رہے ہیں، ہمارا راستہ کیوں روکتے ہو۔ پرویز خٹک نے یہ شکوہ بھی کیا کہ وزیر اعظم نواز شریف کو کوہاٹ میں جلسہ کرنے دیا تو وہ ہمیں اسلام آباد آنے سے کیوں روک رہے ہیں۔