ch-nisar

ملک میں انتشار سے دشمنوں کو فائد ہوگا ،وزیر داخلہ

اسلام آباد (ہاٹ لائن)وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ ملک میں انتشار سے دشمنوں کو فائد ہوگا ، تمام فریقین سپریم کورٹ کے فیصلے کے انتظار کریں ، پولیس اور ایف سی کی تعیناتی پر سیاست نہ کی جائے، دفاع پاکستان کونسل پیپلز پارٹی کے دور میں بنی، بڑے بڑے جلسے پیپلز پارٹی کے دورے میں کئے ، انتظامیہ نے شرائط پر جلسہ کر نے کی اجازت دی، پرویز خٹک وزیر اعلیٰ بن کر آئے تو شہبازشریف سے بھی زیادہ پروٹول کو دینگے ، اسلام آباد پر چڑھائی کےلئے جتھے کے ساتھ آئے تو حشر پتھر گڑھ جیسا ہوگا ۔جمعرات کو پولیس لائنز میں اسلام آباد، پنجاب، اے جے کے پولیس اور ایف سی کے جوانوں کے دربار سے خطاب کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ میں اسلام آباد، راولپنڈی اور پاکستان بھر کے شہریوں کی طرف سے قانون کی عمل داری قائم کرنے پر پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے جوانوں اور افسروں کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔ انہوں نے افسروں اور جوانوں سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ آپ قابل فخر ہیں، آپ کو مبارک ہو۔ انہوں نے کہا کہ دس سال بعد پاکستان کی پولیس نے ملک کی دھرتی پر قانون و آئین کی عمل داری قائم کر کے دنیا کو پیغام دیا ہے کہ اب کوئی مسلح جتھا نکل کر نہ پولیس پر اپنی رائے مسلط کر سکتا ہے نہ حکومت اور نہ کسی شہر پر، یہ بہت بڑا عمل ہے جس کا احساس ہر پاکستانی کو ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ دنوں جو کچھ ہوتا رہا، یہ جنگ نہیں تھی اور نہ ہی کسی کی جیت یا ہار تھی۔ انہوں نے کہا کہ پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے قانون اور آئین کی عمل داری قائم کی، میں نے صرف احکامات اور ہدایات جاری کیں اور افسروں اور جوانوں نے مشکل ترین حالات میں اپنی ذمہ داریاں پوری کیں۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے جوان جن مشکل حالات میں کام کرتے ہیں، عوام اس کے بارے میں نہیں جانتے، ان کے بھی گھر ہین، والدین اور بیوی بچے ہیں، وہ ان کا انتظار کرتے ہیں اور یہ عوام کی حفاظت کےلئے کمر بستہ ہوتے ہیں ¾ان کےلئے بہتر سہولیات اور مراعات لاﺅں گا، پولیس کے گریڈ بہتر کئے ہیں، مزید مراعات بھی دی جائیں گی۔