کراچی میں پھر دہشتگردی …. 30 منٹ میں 6 افراد جاں بحق

کراچی (ہاٹ لائن) شہر قائد ایک بار پھر دہشتگردوں کے نشانے پر ہے۔ 30 منٹ میں فائرنگ کے 3 مختلف واقعات میں 6 افراد جاں بحق ہو گئے۔ شفیق موڑ کے قریب فائرنگ کے نتیجے میں تین افراد جاں بحق ہوئے۔ پولیس کے مطابق، لاشوں کو اسپتال مننتقل کر دیا گیا ہے۔ جائے وقوعہ سے 9 ایم ایم پستول کے 6 خول بھی ملے ہیں۔ جاں بحق افراد کی شناخت یعقوب، شاہد اور عثمان کے ناموں سے ہوئی ہے۔ تینوں افراد مذہبی جماعت کی ریلی میں شرکت کیلئے جا رہے تھے۔ فائرنگ کا دوسرا واقعہ پیٹل پاڑا میں پیش آیا جہاں دو افراد کو سروں پر گولیاں ماری گئیں جس کے نتیجے میں وہ موقع پر ہی دم توڑ گئے۔ جاں بحق ہونے والے محمد امین اور عبدالبقی تبلیغی جماعت کے کارکنان تھے۔ فائرنگ کا تیسرا واقعہ حیدری کے علاقے میں پیش آیا جس کے نتیجے میں 3 افراد زخمی ہو گئے۔ پولیس کے مطابق، زخمی افراد کو اسپتال منتقل کیا گیا جہاں ان میں سے شفیق الرحمان نامی پیش امام زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہو گیا جبکہ باقی دو کی حالت نازک بتائی جاتی ہے۔ دریں اسثناء، ٹارگٹ کلنگ کے 3 مختلف واقعات کی فرانزک رپورٹ تیار کر لی گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق، تینوں واقعات میں ایک ہی اسلحہ استعمال کیا گیا، اسلحہ ماضی میں ہونے والی کسی واردات سے میچ نہیں ہوتا۔ دوسری جانب، وزیر اعلیٰ سندھ نے فائرنگ کے واقعات کا نوٹس لیتے ہوئے ایڈیشنل آئی جی سے فوری طور پر رپورٹ طلب کر لی ہے۔ وزیر اعلیٰ نے ایڈیشنل آئی جی کو ہدایت کی ہے کہ ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کیا جائے۔