تحریک انصاف عدالت جا کر خاموش کیوں ہو گئی؟ (ن) لیگ

اسلام آباد(ہا ٹ لائن) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ عمران خان کنٹینرز پر چڑھ کر کہتے رہے کہ ان کے پاس وزیر اعظم کیخلاف الزامات نہیں بلکہ ثبوت ہیں۔ لیکن آج ان کے وکلاء نے سپریم کورٹ کے روبرو کہہ دیا ہے کہ ان کے پاس کوئی ثبوت نہیں ہیں۔ اگر ان کے پاس پاناما لیکس کے حوالے سے کوئی ثبوت ہی نہیں، تو قوم کا وقت کیوں ضائع کیا گیا؟ اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے رہنماء دانیال عزیز نے کہا کہ سپریم کورٹ میں شواہد درکار ہوتے ہیں لیکن تحریک انصاف کے وکیل حامد خان کہتے ہیں کہ ان کے پاس کوئی ثبوت نہیں ہیں۔ محمود الرشید نے 2014ء میں چوبیس جائیدادوں کا دعویٰ کیا تھا۔ آج ان کو عدالت میں کیوں پیش نہیں کیا گیا؟
اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے لیگی رہنماء محمد زبیر نے کہا کہ وزیراعظم کے تینوں بچوں سے متعلق موقف پر قائم ہیں۔ ن لیگ کے پاس وہ تمام شواہد ہیں جو عدالت نے طلب کئے۔ آج تمام دستاویزات عدالت میں جمع کر وا دیں ہیں۔ اگلے منگل تک سپورٹنگ دستاویزات بھی جمع کر وا دیں گے۔ محمد زبیر نے کہا کہ کیس عدالت میں چلا گیا، چیئرمین تحریک اںصاف اب سیاست چھوڑ کر شواہد پر آ جائیں۔ عمران خان پہلے کہتے تھے کہ الزامات نہیں ثبوت ہیں لیکن اب ان کے وکلاء نے اعتراف کیا ہے کہ ان کے پاس دستاویزات ہی نہیں ہیں۔ اگر ان میں تھوڑی سی تہذیب ہو تو غلط بیانی پر اظہار شرمندگی کریں۔