ترکی کے صدر رجب طیب اردوان 16 اور 17 نومبر کو پاکستان کا دورہ کریں گے

اسلام آباد (ہاٹ لائن) ترکی کے صدر رجب طیب اردوان 16 اور 17 نومبر کو پاکستان کا دورہ کریں گے۔ انہیں اس دورہ کی دعوت صدر ممنون حسین نے دی ہے۔ دفتر خارجہ کی طرف سے جاری بیان کے مطابق اگرچہ ترک صدر کئی مواقع پر پاکستان کا دورہ کر چکے ہیں، تاہم منصب سنبھالنے کے بعد ان کا یہ پاکستان کا پہلا دوطرفہ دورہ ہوگا۔ ایک اعلیٰ سطح کا وفد بھی ان کے ہمراہ ہوگا جس میں وزراء، سینئر حکام اور بڑی تعداد میں کاروباری شخصیات شامل ہوں گی۔ صدر ممنون حسین سے ملاقات کے علاوہ ترک صدر طیب اردوان وزیراعظم محمد نواز شریف سے گفت و شنید کریں گے جس میں دونوں رہنما دو طرفہ امور کے علاوہ علاقائی اور عالمی مسائل پر بھی بات چیت کریں گے۔ ترک صدر پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے بھی خطاب کریں گے۔ صدر ممنون حسین اپنے ترک ہم منصب اور ان کے وفد کے اعزاز میں ضیافت کی میزبانی بھی کریں گے۔ ترک صدر لاہور بھی جائیں گے جہاں وزیراعظم شاہی قلعہ میں ان کے اعزاز میں ایک ضیافت دیں گے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان اور ترکی کے درمیان نہایت پرجوش، دوستانہ اور باہمی اعتماد سے عبارت مثالی تعلقات استوار ہیں جن کی جڑیں مشترکہ تاریخ، عقیدے، ثقافت میں پیوست ہیں۔ قیادت اور وزارتی سطح پر بکثرت تبادلے اور مختلف شعبوں میں بڑھتا ہوا تعاون پاکستان اور ترکی کے درمیان منفرد رشتوں کا طرہ ءامتیاز ہے۔ دونوں ممالک کی قیادت تاریخی رشتوں کو 21 ویں صدی کے حقائق کی روشنی میں مضبوط تزویراتی شراکت داری میں بدلنے کے لئے پرعزم ہے۔ قیادت کی سطح پر اعلیٰ سطح کی تزویراتی تعاون کونسل اور کئی دوطرفہ ادارہ جاتی نظام تبادلہ خیال کےلئے موثر پلیٹ فارم مہیاء کرتے ہیں۔ پاکستان اور ترکی کے درمیان دوطرفہ تعلقات میں حالیہ برسوں کے دوران نمایاں اضافہ اور فعالیت دیکھنے میں آئی ہے۔ دونوں ممالک مضبوط اقتصادی شراکت داری استوار کرنے کی کوششوں کے سلسلے میں تجارت، سرمایہ کاری اور اقتصادی تعاون پر توجہ مرکوز کئے ہوئے ہیں۔ پاکستان اور ترکی علاقائی اور عالمی فورموں پر ایک دوسرے کی بھرپور حمایت کرتے ہیں۔