شریف فیملی آج عدالت میں کونسی دستاویزات پیش کرنے جا رہی ہے ؟

اسلام آباد (ہاٹ لائن ) تحریک انصاف کی جانب سے پاناما لیکس کیس کے حوالے سے سپریم کورٹ میں پیش کیے جانے والے شواہد اور دستاویزی ثبوتوں کے جواب میں آج حکمران خاندان پاناما لیکس میں سامنے آنے والے فلیٹس اور دیگر اثاثوں کے بارے میں اپنا موقف پیش کریگا۔

شریف خاند ان آج سپریم کورٹ میں پاناما لیکس کیس کی سماعت کے دوران اپنے وکلاءکے ذریعے موقف پیش کریگی کی ان سے جوڑی جانے والی جائیداد انکے دادا میاں شریف کی ہے ۔

میاں شریف نے 1992ءمیں دو کمپنیاں بنائیں جو بعد میں نواز شریف اور انکے بچوں کے حصے میں آگئیں جبکہ میاں شریف کی ملکیت میں 2فلیٹس بھی تھے جبکہ باقی دو بعد میں خریدے گئے ۔
گزشتہ روز پاکستان تحریک انصاف نے سپریم کورٹ میںشریف خاندان کے خلاف بطور شواہد اور ثبوت پوری کتاب جمع کرائی تھی ۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ عمران خان کی جانب سے سپریم کورٹ میں جمع کرائے جانے والے 686صفحات پر مشتمل شواہد میں سے 286صفحات اسی کتاب میں سے لیے گئے تھے۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ صحافی اسد کھرل کی جانب سے پیش کردہ ثبوت سپریم کورٹ کے پانچ رکنی بینچ نے اس سے قبل ہی مسترد کر دیے تھے جبکہ وزیر اعظم نواز شریف اور انکے خاندان کے خلاف پاناما لیکس کیس میں فریق بننے کی انکی درخواست بھی مسترد کر دی گئی تھی ۔(ی-ا)