ٹریفک سارجنٹ ہلاکت کیس: عبدالمجید اچکزئی ضمانت پر رہا


کوئٹہ: ٹریفک سارجنٹ ہلاکت کیس میں گرفتار رکن بلوچستان اسمبلی عبدالمجید اچکزئی کو جیل سے رہا کردیا گیا۔

کوئٹہ میں ٹریفک سارجنٹ عطاء اللہ کی رکن بلوچستان اسمبلی عبدالمجید اچکزئی کی گاڑی سے ٹکر میں ہلاکت کے کیس میں ملزم کی جانب سے ضمانت کی درخواست دائرکی گئی تھی جس پر گزشتہ روز فیصلہ سناتے ہوئے کوئٹہ کی انسداد دہشت گردی عدالت نے عبدالمجید اچکزئی کی ضمانت منظور کی تھی۔

جیل سے رہائی پر پشتونخوا میپ کے کارکنوں اور دیگر افراد نے مجید اچکزئی کا جیل کےباہر استقبال کیا اور پھول برسائے جب کہ ان کے حق میں نعرے بازی بھی کی۔

عبدالمجیداچکزئی کو رہائی کے بعد جیل سپرنٹنڈنٹ اسحاق زہری باہر تک چھوڑنے بھی آئے۔

یاد رہے کہ عبدالمجید اچکزئی کی گاڑی سے ٹکر کے نتیجے میں ٹریفک سارجنٹ کی ہلاکت کا واقعہ جون 2017 میں پیش آیاتھا۔

ابتداء میں پولیس نے معاملہ دبانے کی کوشش کی تھی اور تفتیش کے بجائے پرچہ نامعلوم افراد کے خلاف کاٹ دیا تھا، لیکن چیف جسٹس پاکستان کے از خود نوٹس لینے پر ایم پی اے عبدالمجید اچکزئی کے خلاف کارروائی عمل میں لائی گئی تھی۔

عبدالمجیداچکزئی کی شہری کے قتل کیس میں ضمانت پہلے ہی ضمانت منظور ہوچکی ہے جب کہ انہیں شہری کےاغوا کیس اور گاڑی ٹیمپرنگ کیس میں بھی بری کیا جاچکا ہے