شوکاز پر پی پی اور اے این پی جواب دیکر بات ختم کرسکتے تھے: شاہد خاقان

مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور پی ڈی ایم کے جنرل سیکرٹری شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ شوکاز کے معاملے پر پیپلزپارٹی اور اے این پی ایک لائن کا جواب دے کر بات ختم کرسکتی تھیں۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ اجلاس بلاکر تو تو میں میں کرنا مناسب نہیں تھا، پیپلزپارٹی اور اے این پی ایک لائن کا جواب دے کر بات ختم کرسکتی تھیں۔

انہوں نے کہا کہ امیر حیدر ہوتی کو بتادیا تھا کہ وضاحت طلب کرنا پڑے گی، اگر مسلم لیگ (ن) نے غلطی کی تو ضروری نہیں کہ اس سے بڑی غلطی کی جائے۔

دوسری جانب جمعیت علمائے اسلام کے رہنما عبدالغفور حیدری کا کہنا ہے کہ جھکنے اور بکنے کے بھی طریقے ہوتے ہیں، پیپلزپارٹی اور اے این پی کے عمل سے پی ڈی ایم کی جگ ہنسائی ہوئی۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) میں شامل عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) نے اتحاد سے علیحدگی کا اعلان کردیا ہے جبکہ پیپلز پارٹی نے شوکاز نوٹس کے معاملے پر پی ڈی ایم کو بھرپور جواب دینے کا فیصلہ کیا ہے۔