بلاول بھٹو کی زندگی کو خطرہ اور خدشات لاحق ہیں ، مولا بخش چانڈیو

کراچی (ہاٹ لائن) سندھ وزیر اطلاعات مولابخش چانڈیو نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو کی زندگی کو خطرہ اور خدشات لاحق ہیں وفاقی حکومت سے ہمارا مطالبہ ہے کہ انھیں جلد سے جلد سیکیوریٹی فراہم کرے اگر انھیں کچھ ہوا تو اس کی زمے داری وفاقی حکومت پر عائد ہوگی،پنجاب سمیت باقی صوبوں اور وفاق کے مشیروں کے پاس محکمے ہیں پھر سندھ میں امتیازی سلوک کیو ں کیا جارہا ہے اختلاف کرنا ہماراحق ہے عدلیہ کے خلاف لڑنے کا تصور بھی نہیں کرسکتے سندھ کے مشیر کے خلاف ہونے والے فیصلے کے خلاف اپیل میں جائیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے کراچی پریس کلب کے دورے کے موقع پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ کراچی پریس کلب کے صدر فاضل جمیلی اور سیکریٹری اے ایچ خانزادہ بھی موجود تھے۔مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ جہاں ملک اور زمین کو ماں کہا جاتا ہے اس ہی طرح سے ریاست کے ادارے بھی ماں باپ کی طرح سے ہوتے ہیںوالدین سے بھی اختلاف ہوتا ہے ،سپریم کورٹ نے بھٹو کو مجرم ٹھیرایا تھا اور انھیں قاتل قرار دیا جب تک فیصلہ عدالت میں ہوتا ہے تو وہ اس کی ملکیت ہوتا ہے اور جب فیصلہ عدالت سے باھر آجائے تو وہ عوام کا حصہ بن جاتا ہے بھٹو شہید کے خلاف جو عدلیہ نے جو فیصلہ دیا اسے عوام نے تسلیم نہیں کیاآج خود عدلیہ بھی اس فیصلے کو ماننے کے لئے تیار نہیں ہے۔