کوئٹہ میں جماعت الدعوة کا کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

کوئٹہ (ہاٹ لائن ) جماعة الدعوةکے زیرِ اہتمام ملک بھر کی طرح صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں بھی کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کے خلاف جمعہ کے روز پریس کلب کوئٹہ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔مسئول جماعة الدعوةضلع کوئٹہ مولانا محمداشفاق کی قیادت میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔پریس کلب کوئٹہ کے کے سامنے ہونے و الے احتجاجی مظاہرے سے مسﺅل جماعة الدعوةضلع کوئٹہ مولانا محمداشفاق، رہنما جماعتہ الدعوة کوئٹہ محمد ادریس مغل، جماعتِ اسلامی کے مولانا عبدالکبیر شاکر، ورکرز پارٹی کے خدائے دوست کاکڑ، السادات پارٹی کے سید فقیر آغا، نظریہ پاکستان فورم کے راز محمد لونی و دیگرنے بھی خطاب کیا۔ مظاہرے میں شہر بھر سے مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ مظاہرین نے بھارتی جارحیت اور کنٹرول لائن پر گولہ باری کو کھلی دہشت گردی قرار دیتے ہوئے زبردست نعرے بازی بھی کی۔ اس موقع پر مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اور کتبے اٹھا رکھے تھے، جن پر بھارت سے رشتہ کیا نفرت کا انتقام کا، ایک قوم ایک آواز پاک فوج زندہ باد، بھارتی دہشت گردی کا منہ توڑ جواب دیا جائے، جیسے جملے درج تھے۔جماعتہ الدعوة ضلع کوئٹہ مولانا محمد اشفاق نے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ لائن آف کنٹرول پر مسلسل فائرنگ اور گولہ باری غیر اعلانیہ جنگ کے مترادف ہے۔ بھارت اشتعال انگیزی پھیلاکر اپنے مذموم عزائم کی تکمیل چاہتا ہے۔ جارحیت پسندی بھارت کو مہنگی پڑے گی۔ سیز فائر لائن کی خلاف ورزیوں اور بلا اشتعال فائرنگ پر پاکستان خاموشی اختیار نہ کرے۔ بھارت شروع دن سے پاکستان کے وجود کو برداشت کرنے پر تیار نہیں ہے۔ نریندر مودی اور ان کی کابینہ حواس باختہ ہوچکی ہے۔