شمالی کوریا کے چڑیا گھر کی چین اسموکرمادہ چمپینزی کے چرچے

پیانگ یانگ: شمالی کوریا کے دارالحکومت میں پیانگ یانگ میں حال ہی میں کھولے گئے چڑیا گھر میں سگریٹ پینے والی مادہ چمپینزی لوگوں کی توجہ کا مرکز بن گئی۔
یقیناً آپ نے ایسے لوگوں کو ضرور دیکھا ہوگا جو چین اسموکرز کے حوالے سے جانے جاتے ہیں کیونکہ انہیں مسلسل سگریٹ پینے کی عادت ہوتی ہے لیکن اگر کوئی جانور چین اسموکر بن جائے تو یقینی طور پر انتہائی حیرت کی بات ہے۔ ایسا ہی کچھ شمالی کوریا کے چڑیا گھر میں ہوا جہاں چین اسموکر 19سالہ مادہ چمپینزی ’دلائے‘ نے لوگوں کی توجہ حاصل کرلی ہے۔abc_wnn_smoking_chimp_101007_wg
چڑیا گھر انتظامیہ کے مطابق چمپینزی روزانہ ایک سگریٹ کا پیکٹ پی جاتی ہے صرف یہی نہیں بلکہ چمپینزی خود اپنی سگریٹ لائٹر کی مدد سے جلاتی ہے اور اگر لائٹر دستیاب نہ ہوتو وہاں سیر کے لیے آنے والے افراد میں سے کسی سے بھی سگریٹ لے کر اپنی سگریٹ جلالیتی ہے۔ چڑیا گھر انتظامیہ کا کہنا ہے کہ چمپینزی اس کے علاوہ اور دیگر کمالات دکھانے کا ہنربھی جانتی ہے جس میں اس کا رقص اور دیگر کمالات شامل ہیں جب کہ چمپینزی کی شہرت کی وجہ سے روزانہ چڑیا گھر میں آ نے والے افراد کی تعداد بڑھتی جارہی ہے۔دوسری جانب چڑیا گھر میں سیر کے لیے آنے والے افراد کا کہنا ہے کہ چمپنزی کے سگریٹ پینے کے عمل سے بچوں پر برا اثر پڑسکتا ہے تاہم انتظامیہ کا کہنا ہے کہ چمپیزی سگریٹ کا دھواں اندر نہیں لیتی بس کش لگا کر دھواں باہر نکال دیتی ہے۔